فیس بک پر جم کر برسی نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم، حملے کا ویڈیو لائیو ہونے پر مانگا جواب

Share Article

new-zealand-pm

کرئسٹ چرچ: نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا ارڈرن نے فیس بک کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے مسجد میں ہوئی فائرنگ کے براہ راست نشریات کو لے کر نشانہ سادھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ فیس بک اور دیگر سوشل میڈیا کمپنیوں سے اس بات کا جواب چاہتی ہیں کہ ان کی سوشل ویب سائٹ پر مساجد میں لوگوں پر ہوئے حملے کا براہ راست نشر کیسے ہوا ؟۔

نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا ارڈرن نے کہا کہ ان بڑی سوشل میڈیا کمپنیوں کو بہت سے سوالات کا جواب دینا ہو گا۔ وہیں فیس بک کی چیف آپریٹنگ آفیسر شیرل سینڈبرگ ان کے رابطے میں ہیں۔

غور طلب ہے کہ جمعہ کو نیوزی لینڈ میں مساجد پر حملہ کرنے والے مسلح شخص کی طرف سے بنایا گیا بہت خطرناک اور دردناک ویڈیو فیس بک پر لائیو چلا تھا، حالانکہ بعد میں فیس بک نے اسے ہٹا لیا، لیکن تقریب کے دوران 17 منٹ کا یہ ویڈیو یو ٹیوب اور ٹویٹر سمیت دوسرے انٹرنیٹ پلیٹ فارم پر مسلسل شیئر کیا جاتا رہا اور یہ کمپنیاں ان ویڈیوز کو ہٹانے کے لئے جدوجہد کرتی نظر آئیں۔

حالانکہ پی ایم یم ارڈرن نے کہا، ’ ہم نے ویڈیو ہٹوانے کے لئے ہر ممکن کوشش کی‘
new-zealand-2

وہیں فیس بک نیوزی لینڈ میا گارلک نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے مواد کو ہٹانے کے لئے وہ مسلسل کام کر رہی ہیں۔ کمپنی کاکہنا ہے کہ، ’پہلے 24 گھنٹے میں ہم نے حملے کے عالمی سطح پر 15 لاکھ ویڈیو ہٹائے ہیں، جن میں سے 12 لاکھ کو اپ لوڈ کرتے وقتبلاک کیا گیا ہے۔‘

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *