#MeToo معاملے میں آلوک ناتھ کو ملی پیشگی ضمانت، پروڈیوسر ونتا نندا نے لگایا تھا ریپ کا الزام

Share Article
Alok Nath

می ٹو معاملے میں سینئر اداکارآلوک ناتھ کو راحت ملی ہے۔ کورٹ نے ان کو پیشگی ضمانت دے دی ہے۔

 

سی بی آئی کو کان کنی شعبہ کے بابو گھر سے ملے دو کروڑ، جانیے پورا معاملہ ہے کیا

ممبئی: می ٹو معاملے میں سینئر اداکار آلوک ناتھ کوراحت ملی ہے۔ کورٹ نے ان کو پیشگی ضمانت دے دی ہے۔ قلم کار اور ہدایت کار ونتا نندا نے اداکار آلوک ناتھ کے پر ریپ کا مقدمہ درج کرایا تھا اس معاملے میں آلوک ناتھ کو سنیچر کو عدالت نے پیشگی ضمانت دے دی۔ ذرائع کےمطابق یہاں ڈنڈوشي کے شہر دیوانی و سیشن کورٹ نے نندا کی ایف آئی آر کے بعد گرفتاری سے تحفظ فراہم کرنے والی درخواست پر سماعت کی۔

ونتا نندا نے دعویٰ کیا تھا کہ آلوک ناتھ نے 19سال پہلے ان کےساتھ عصمت دری کیا تھا۔ متاثرہ کےمطابق پچھلے سال 17اکتوبر کو کو اوشیورا پولیس تھانے میںآلوک ناتھ کے خلاف شکایت درج کرائی تھی، جس کے بعد آلوک ناتھ نے مجسٹریٹ کورت میںنندا کے خلاف مان ہانی کا مقدمہ دائر کیا تھا۔ آلوک ناتھ نے متاثرہ کےذریعہ لگائے گئے سبھی الزامات کو خارج کر دیا تھا اور معاوضہ کے طورپر ایک روپے کا مان ہانی کا مقدمہ دائر کیا تھا۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے نندا سے تحریر طورپر معافی بھی مانگی تھی۔

 

سارا علی خان کو ماں امرتا سنگھ کی نصیحت …

 

ونتا کا الزام تھا کہ اس گھٹنا کے بعد وہ اتنا ڈر گئی تھیں کہ نشے میں ڈوب گئی تھیں۔ ونتا کے الزامات کے بعد آلوک ناتھ پر ایک بعد ایک کئی الزام لگے۔ کئی اور اداکارائوں ک؎نے بھی ان کے برتائو کے بارےمیںخلاصے کیے۔
حالانکہ آلوک ناتھ نے ان الزامات کو بے بنیاد بتاتے ہوئے ونتا نندا پر مان ہانی کا مقدمہ بھی کیا تھا۔ آلوک ناتھ نے صفائی دیتے ہوئےکہا تھا کہ یہ ایسا وقت ہے کہ عورتیں جو کہٰں گی اسے صحیح مان لیا جائے گا۔ اس لیے وہ اسے طول نہیں دینا چاہتے ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *