بالا کوٹ ایئر اسٹرائک کے وقت رات بھر ’کوڈ کی زبان‘ میں رپورٹ لے رہے تھے پی ایم مودی

Share Article

balakot

جموں و کشمیر کے پلوامہ میں دہشت گردانہ حملے کے بعد پاکستان کے بالاکوٹ میں انڈین ایئر فورس کی جانب سے جب اسٹرائک کی گئی تھی، اس وقت پی ایم نریندر مودی پورے واقعے پر نظر بنائے ہوئے تھے۔اس بات کا انکشاف خود پی ایم نریندر مودی نے ایک انٹرویو میں کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ قریب علی الصباح 3.40 بجے مجھے مہم کامیاب ہونے کے بارے میں جانکاری دی گئی۔ مجھے آپریشن سے وابستہ لوگوں نے کوڈ کی زبان میں بتایا۔ بتا دیں کہ 2016 میں اڑی حملے کے بعد جب انڈین آرمی نے سرجیکل اسٹرائک کی تھی اس وقت بھی پی ایم مودی نے آپریشن پرنظررکھنے کی بات کہی تھی۔

انٹرویو میں بتائی یہ بات: نیوز چینل اے بی پی کو دیے گئے ایک انٹرویو میں وزیر اعظم نریندر مودی نے بالاکوٹ اسٹرائک کے وقت کیا ہوا تھا اس کے بارے میں جانکاری دی۔ ان سے سوال پوچھا گیا تھا کہ پی ایم مودی اسٹرائک کے وقت کیا دیکھ رہے تھے؟ پی ایم نے جواب میں کہا ’’ایک ٹورسٹس کی بس کھائی میں گرتی ہے تو بھی میں نے رات تک فون کرتے رہتا ہوں، کون اسپتال پہنچا، علاج ہو رہا ہے کہ نہیں، سب نکالے گئے یا نہیں۔یہ میرے مزاج کا حصہ ہے، میرا کمٹمنٹ ہے۔ یہ (پاکستان میں ایئر اسٹرائک) تو بہت بڑا کام تھا، جوانوں کی زندگی داؤ پر لگی تھی۔ میں نے کوئی بہت تیس ماری کر دی، ایسا نہیں ہے‘‘۔

وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا، ’’میں کیسے سو سکتا ہوں جب مجھے پتہ ہے کہ ایک بجے کیا ہونے والا ہے، دو بجے ہونے والا ہے۔ میں نے ہمیشہ کسی سے رپورٹ نہیں مانگتا لیکن میں جاگتا رہتا ہوں۔ اس دن 3.40 بجے مجھے بتایا گیا کہ ہو گیا۔کوڈ کی زبان میں بتایا گیا۔ پھر میں چاہتا تو سو سکتا تھا لیکن میں نے سوچا دیکھا جائے دنیا میں اس کی کیا ہلچل ہے۔ نیٹ سرفنگ کرنے لگا پانچ سوا پانچ بجے تک کوئی ہلچل نہیں تھی‘‘۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *