جموں و کشمیرکی تشکیل نو کے بعد آج پہلی بار جموں میں لگے گا دربار

 

جموں و کشمیر کی تشکیل نو کے بعد پیر کو پہلی بار جموں میں دربار لگے گا۔ ابھی جموں سیکرٹریٹ میں اگلے چھ ماہ تک مرکز کے زیر انتظام جموں و کشمیر کا سرکاری کام کاجچلے گا۔ جموں سیکرٹریٹ میں سرکاری کام کاج لیفٹیننٹ گورنر گریش چندر مرمو کی نگرانی میں کیا جائے گا۔ لیفٹیننٹ گورنر ہفتہ کو سرینگر سے جموں پہنچ گئے تھے۔ سری نگر سے تین ہزار سے زائد ملازمین بھی ہفتہ دیر شام تک پہنچ گئے تھے اور جموں کے ملازمین پہلے ہی آ گئے تھے۔

اتوار کو بھی سری نگر سے ملازمین جموں پہنچے۔اس دوران ملازمین کو جموں لانے کے لئے جموں و سرینگر نیشنل ہائے وے کو یکطرفہ ٹریفک کیلئے کھول دیا گیا تھا۔ ملازمین کے قافلے کے آگے پیچھے سیکورٹی بھی سخت تھی۔

اس دوران انتظامیہ نے دربار موو کی وجہ سے جموں سیکرٹریٹ اور آس پاس کے علاقوں میں سیکورٹی بڑھا دی ہے۔ انتظامیہ نے جگہ جگہ حفاظتی دستوں کی تعیناتی کر دی ہے تاکہ جموں سیکرٹریٹ میں سرکاری کام کاج اگلے چھ ماہ تک محفوظ طریقے سے جاری رہے۔ اس کے ساتھ ساتھ ان علاقوں کے اندر اور باہر سیکورٹی کے کافی انتظامات کیے گئے ہیں،جہاں سرکاری ملازمین رہنے جا رہے ہیں وہاں بھی سیکورٹی سخت ہے۔ انتظامیہ نے حفاظتی دستوں کی تعیناتی کے ساتھ ساتھ سی سی ٹی وی کیمرے بھی تبدیل کر دئے گئے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی دربار کھلنے کے پہلے دن ہونے والے احتجاجی مظاہروں سے نمٹنے کی بھی انتظام کرلیا گیاہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *