یوگی اور مایاوتی پر الیکشن کمیشن کا بڑا ایکشن، انتخابات کی تشہیر پر پابندی

Share Article

 

ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کی صورت میں الیکشن کمیشن نے سخت قدم اٹھایا ہے. الیکشن کمیشن نے اتر پردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ اور بہوجن سماج پارٹی کی سربراہ مایاوتی کے تشہیر کرنے پر روک لگا دی ہے.

 

Image result for election commission of india

ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کی صورت میں الیکشن کمیشن نے سخت قدم اٹھایا ہے. الیکشن کمیشن نے اتر پردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ اور بہوجن سماج پارٹی کی سربراہ مایاوتی کے تشہیرکرنے پر روک لگا دی ہے. الیکشن کمیشن کی یہ روک 16 اپریل سے شروع ہوگی. جو یوگی آدتیہ ناتھ کے لئے 72 گھنٹے اور مایاوتی کے لئے 48 گھنٹے تک لاگو رہے گی.
اس دوران یوگی آدتیہ ناتھ اور مایاوتی نہ ہی کوئی ریلی سے خطاب کر پائیں گے، نہ ہی سوشل میڈیا کا استعمال کر پائیں گے اور نہ ہی کسی کو انٹرویو دے پائیں گے. الیکشن کمیشن کا ایکشن 16 اپریل صبح 6 بجے شروع ہوگا.
الیکشن کمیشن کے فیصلے سے صاف ہے کہ یوگی آدتیہ ناتھ 16، 17 اور 18 اپریل کو کوئی تشہیر نہیں کر پائیں گے. اس کے علاوہ مایاوتی 16 اور 17 اپریل کو کوئی انتخابی مہم نہیں کر پائیں گی.

 

 

کیا تھے دونوں رہنماؤں کے بیان؟
آپ کو بتا دیں کہ بی ایس پی سربراہ مایاوتی نے اتر پردیش کے دیوبند میں انتخابی ریلی کے دوران مسلم کمیونٹی کے لوگوں سے ووٹوں کے لئے اپیل کی تھی. مایاوتی نے اپنے خطاب میں کہا تھا کہ مسلم کمیونٹی کے لوگ اپنا ووٹ بٹنے نہ دیں اور صرف مهاگٹھبدھن کے لئے ووٹ کریں۔ مایاوتی کا یہ بیان مذہب کے نام پر ووٹ مانگنے کے قوانین کی خلاف ورزی ہے.
وہیں اتر پردیش کے وزیر یوگی آدتیہ ناتھ نے اپنے ایک خطاب میں مایاوتی پر حملہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ اگر اپوزیشن کو علی پسند ہے، تو ہمیں بجرنگ بلی پسند ہیں. دونوں رہنماؤں کے ان بیانات پر الیکشن کمیشن نے نوٹس لیا تھا اور دونوں رہنماؤں کو ہدایت دی تھی.

 

 

 

سپریم کورٹ نے لگائی تھی پھٹکار
آپ کو بتا دیں کہ پیر کی صبح ہی سپریم کورٹ نے مایاوتی کے دیوبند ریلی میں کی گئی تقریر پر اعتراض ظاہر کی تھی. عدالت کی جانب سے الیکشن کمیشن کو پھٹکار لگائی گئی تھی کہ کمیشن نے ابھی تک اس معاملے میں کیا کارروائی کی ہے. سپریم کورٹ نے کہا تھا کہ کمیشن نے صرف نوٹس ہی جاری کر رہا ہے، کوئی سخت ایکشن کیوں نہیں لے رہا ہے.

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *