رشتہ شرمسار:15سال کی سگی بہن سے چارسال تک ریپ کرتے رہے دوبھائی

Share Article
Rape-of-minor
اترپردیش کے میرٹھ میں رشتوں کوشرمسارکرنے والا ایک معاملہ سامنے آیاہے۔یہ واقعہ نہ صرف انسانیت کو بلکہ رشتے کوبھی تار تار کرنے والاہے۔دراصل، میرٹھ میں 15سال کی لڑکی کے ساتھ اس کے ہی دوسگے بھائیوں نے مبینہ طورپر کئی بارریپ کیا۔ بتایاجارہاہے کہ 15سال کی لڑکی کے ساتھ اس کے دوبھائیوں نے چارسال تک اس کا ریپ کیا۔
ذرائع کے مطابق، گذشتہ روزاترپردیش کے میرٹھ میں ایک بہن نے اپنے دو سگے بھائیوں پر آبروریزی کا سنسنی خیز الزام لگا کر سب کو حیران کردیا ہے۔ 12 ویں کلاس میں پڑھنے والی بہن کا الزام ہے کہ گزشتہ چار سالوں سے اس کے دونوں بھائی اس کی آبروریزی کرتے آرہے ہیں۔ یہ دونوں کسی کو بتانے پر جان سے مارنے کی دھمکی دیتے ہیں۔ متاثرہ نے کسی طرح ملزم بھائیوں کی کرتوت موبائل میں قید کی اور مدد کیلئے ایک این جی او کے پاس جا پہنچی ، جہاں اس کو پولیس تک پہنچایا گیا۔ پولیس نے دونوں ملزم بھائیوں کو گرفتار کرلیا ہے۔
ایس پی سٹی رن وجے سنگھ کاکہناہے کہ متاثرہ لڑکی کی شکایت کی بنیاد پرمعاملے کی جانچ کی جارہی ہے۔ہم نے دونوں ملزم بھائیوں کے خلاف معاملہ درج کرلیاہے۔انہو ں نے پوچھتاچھ میں اپنے گناہ کوقبول کرلیاہے۔ سول لائنس تھانہ علاقہ کے پانڈو نگر میں رہنے والی لڑکی کے مطابق اس کے دوسگے بھائی دھرمیش اورپرشانت پچھلے چار سال سے اس کے ساتھ ریپ کررہے تھے۔مخالفت کرنے پرما ں کوجان سے مانے کی دھمکی دینے کے ساتھ دونوں اس سے مارپیٹ بھی کرتے ہیں۔ لڑکی کی شکایت پر پولیس نے دونوں ملزم بھائیوں کو گرفتار کرلیا ہے اور لڑکی کی میڈیکل جانچ کرکے معاملہ کی تفتیش میں مصروف ہوگئی ہے۔
متاثرہ نے میڈیا کوبتایاکہ میرے والد دل کے مریض تھے ۔ پچھلے سال ان کی موت ہوگئی۔ گھرپر ماں اوردوبھائی ہیں ۔ذہنی اورجسمانی طورپربہت زیادہ متاثرہونے کے بعد میں میرٹھ کی ایک این جی او کے پاس جا پہنچی۔این جی اوکا ساتھ ملنے کے بعد میں نے ہمت کرکے پولس کومعاملے کے تعلق سے تحریر دی ۔ وہ 12ویں کلاس میں پڑھتی ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *