حکومت نے پیٹ پر ماری لاد،54ہزار ملازمین کوBSNLسے نکالنے کی تیاری

Share Article

bsnl-bhavn

کنگالی کے دہانے پر پہنچے بی ایس این ایل اور ایم ٹی این ایل کو پٹری پر لانے کے لئے بی ایس این ایل میں وی آر ایس اور ریٹائرمنٹ کی عمر میں گھٹانے سے تقریباً 54 ہزار ملازمین کی چھانٹی ہو جائے گی۔ ایم ٹی این ایل اور بی ایس این ایل کے ملازمین رضاکارانہ ریٹائرمنٹ منصوبہ (وی آرایس) کی پیشکش کرنے کو لے کر کابینہ نوٹ جاری کرنے کے لیے وزارت مواصلات الیکشن کمیشن سے منظوری مانگے گا۔ تاہم، اس کے بارے میں حتمی فیصلہ انتخابات کے بعد ہی ہو سکتا ہے۔

ٹیلی کمیونی کیشن محکمہ کابینہ کاغور وفکر کے لئے نوٹ تیار کر رہا ہے جس میں بی ایس این ایل اور ایم ٹی این ایل کے 50 سال سے اوپر کے ملازمین کے لیے وی آرایس کی پیشکش کی سفارش کرے گا۔ حکومت کے ایک سینئر افسر نے صحافیوں کو بتایا کہ سیکشن بی ایس این ایل اور ایم ٹی این ایل کے ملازمین کے لیے وی آریس لانے کو لے کر کابینہ نوٹ تیار کر رہا ہے۔

بھارت سنچار نگم لمیٹڈ (BSNL) کے ملازمین کی تعداد 1.76 لاکھ ہے، جبکہ ایم ٹی این ایل میں 22,000 ملازمین ہیں، ایسا اندازہ ہے کہ اگلے پانچ سے چھ سال میں ایم ٹی این ایل کے 16,000 ملازم اور بی ایس این ایل کے 50 فیصد ملازم ریٹائر ہو جائیں گے۔ بی ایس این ایل اور ایم ٹی این ایل کے لئے وی آرایس سے بالترتیب 6,365 کروڑ روپے اور 2,120 کروڑ روپے کی بچت ہو سکتی ہے۔ محکمہ وی آرایس کی فنانسنگ کے لئے 10 سال کا بانڈ جاری کرے گا۔ ایم ٹی این ایل کے معاملے میں تنخواہ تناسب 90 فیصد تک پہنچ گئی ہے جبکہ بی ایس این ایل کے معاملے میں یہ تقریباً 60 سے 70 فیصد ہے۔

وی آرایس لاگو کرنے اور ریٹائرمنٹ ایج میں کمی سے بی ایس این ایل میں 54,451 ملازمین کی چھنٹنی ہو جائے گی۔ 

اس سے اگلے چھ سال میں بی ایس این ایل کے لیے 13,895 کروڑ روپے کی بچت ہو سکتی ہے۔ وی آرایس سے کمپنی کو ہر سال 1,921 کروڑ روپے کی بچت ہو سکتی ہے۔ اگرچہ، وی آرایس پیکیج لاگو کرنے کے لئے مکمل طور پرتقریباً 13,000 کروڑ روپے خرچ کرنے ہوں گے۔ بی ایس این ایلگزشتہ کئی سال سے خسارے میں چل رہی ہے اور ریلائنس جیو مارکیٹ میں آنے سے اس کا خسارہ اور بڑھا ہے۔ گزشتہ ماہ پہلی بار ایسا ہوا کہ کمپنی اپنے ملازمین کو تنخواہ نہیں دے پائی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *