ایک خاتون پولیس کا حیرت انگیز کردار 

Share Article


انسانی ہمدردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایک خاتون کانسٹبل نے نو مولود لڑکی کو دودھ پلایا۔تفصیلات کے مطابق یاقوت پورہ کے ساکن محمد عرفان کے پاس دواخانہ کے قریب حالت نشہ میں ایک خاتون پہنچی جس نے مومولود کو انہیں تھماتے ہوئے کہا کہ وہ پانی پی کر چند منٹوں میں واپس ہوگی، تاہم یہ خاتون واپس نہیں لوٹی، اسی دوران نومولود رونے لگی، عرفان نے اسے اپنے گھر لے جاکر دودھ کی پاکٹ سے دودھ پلانے کی کوشش کی تاہم اس میں ناکامی پر وہ اپنے دوستوں کے ساتھ مل کر افضل گنج پولیس اسٹیشن پہنچے جہاں انہوں نے لڑکی کو رویندرنامی پولیس ملازم کے حوالے کیا۔ یہ نومولود مسلسل رورہی تھی، رویندر نے اس بات کی اطلاع اپنی بیوی پرینکا کو دی جو ویمنس پولیس اسٹیشن بیگم پیٹ کی کانسٹبل ہے، رویندر کی درخواست پر وہ کیب کے ذریعہ افضل گنج پولیس اسٹیشن پہنچی اور لڑکی کو اپنا دودھ پلایا، پرینکا زچکی کی رخصت تھی۔ اسسٹنٹ سب انسپکٹر محمد طاہر الدین کو پتہ چلا کہ چنچل گوڑہ میں ایک خاتون اپنی لڑکی کے لیے رورہی ہے جس پر وہ اس خاتون کے پاس پہنچے، اس خاتون کی شناخت 30 سالہ شبانہ بیگم کے طور پر کی گئی ہے، جو فلک نما کی رہنے والی ہے اور کچرا چنتی ہے، اس نے اپنی لڑکی کی شناخت کرلی اور اسے ماں کے حوالے کردیا گیا، لڑکی کو پولیس اسٹشین سے میٹرنٹی ہاسپٹل منتقل کردیا گیا، کمشنر پولیس نے پرینکا اور انکے شوہر کی خدمات کی ستائش کی ، انجنی کمار نے ان کو مبارکباد پیش کی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *