ودیا بالن کو گھر میں کسی کا چپل پہننا بھی بالکل پسند نہیں ہے

Share Article
vidya balan

اپنی بہترین اداکاری سے لاکھوں دلوں پر راج کرنے والی ودیا بالن بالی ووڈ کی ان اداکاراؤں میں شمار ہوتی ہیں جو اپنے دم پر فلموں کو ہٹ کراسکتی ہیں ، لیکن آپ کو یہ جان کر حیرانی ہوگی کہ ہندی سنیما کی یہ کامیاب اداکارہ ایک ذہنی بیماری میں مبتلا ہیں ۔

 

جانیں،ایشوریہ رائے اورابھیشیک کے بیچ کس بات پربحث ہوتی ہے

 

اپنی بہترین اداکاری سے لاکھوں دلوں پر راج کرنے والی ودیا بالن بالی ووڈ کی ان اداکاراوں میں شمار ہوتی ہیں جو اپنے دم پر فلموں کو ہٹ کراسکتی ہیں ، لیکن آپ کو یہ جان کر حیرانی ہوگی کہ ہندی سنیما کی یہ کامیاب اداکارہ ایک ذہنی بیماری میں مبتلا ہیں ۔ بالی ڈ میں عرفان خان ، سونالی بندرے ، راکیش روشن کے کینسر جیسی بیماری سے متاثر ہونے کی بات پہلے ہی پتہ چل چکی ہے ۔ اب ودیا بالن کی بیماری کی خبر جان کر ان کے مداحوں کے درمیان بے چینی بڑھ گئی ہے۔ دراصل کچھ وقت پہلے ودیا بالن نے خود ہی بتایا تھا کہ انہیں صاف صفائی رکھنے کی بہت ہی خراب عادت ہے ۔ صاف صفائی کو لے کر وہ جنونی ہیں اور اس کا انہیں آبسیسو کمپلسیو ڈس آرڈر ہے ۔ یہ بیماری کم ہے اور ذہنی پریشانی زیادہ ہے ۔ ایسے شخص کو بار بار ایک ہی کام کرنے کی خواہش ہوتی ہے ۔ جیسے ہاتھ دھونا، چیزوں کو شمار کرنا ، لاک یا کسی چیز کو بار بار چیک کرنا ۔ حالانکہ لوگ اسے کسی کی عادت مان کر نظر انداز کردیتے ہیں ، لیکن اس بیماری میں مریض کسی ایک بات کو لے کر کچھ زیادہ ہی فکر مند رہتا ہے ۔

 

سہانا خان اپنے فون وال پر کس کی تصویر لگاتی ہے؟ جانئے اس رپورٹ میں

 

اس بیماری کی وجہ سے ودیا بالن کو اگر گھر میں ذرہ برابر بھی دھول نظر آجائے تو وہ فوراً ہی صفائی میں لگ جاتی ہیں ۔ اتنا ہی نہیں ودیا بالن کو گھر میں کسی کا چپل پہننا بھی بالکل پسند نہیں ہے ۔ او سی ڈی کسی کو بھی اور کسی بھی چیز کا ہوسکتا ہے ۔ اس پریشانی سے متاثر شخص پر کوئی بھی کام کرنے کا بھوت سوار ہوجاتا ہے ۔

 

سارا علی خان کا بڑھتے وزن پر والد سیف علی خان کی بے چینی بڑھ گئی تھی

 

علاوہ ازیں اس بیماری سے متاثر شخص کو کسی بھی چیز پر توجہ مرکوز کرنے میں پریشانی ہوتی ہے ۔ او سی ڈی کے مریض کسی بھی چیز کو بہت زیادہ سنبھال کر رکھتے ہیں ۔ انہیں کسی بھی چیز کو کھونے کا ڈر لگا رہتا ہے اور اس لئے یہ فضول چیزوں کو بھی سنبھال کر رکھتے ہیں ۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *