پڑوسی کے گھر سے پانی مانگ کر پیاس بجھا رہے ہیں ہائی کورٹ کے جج

Share Article
water
بہار میں عام لوگوں کی کون کہے،ہائی کورٹ کے جج کو بھی پیاس بجھانے کے لئے پڑوسی کے گھر سے پانی لینا پڑرہا ہے۔اس بات کا انکشاف خود جج جیوتی سرن نے ایک معاملے کی سنوائی کے دوران کیا۔جج سرن نے کہا کہ پانی کا تو یہ حال ہے کہ ان کے گھر میں بھی با قاعدہ طور سے پانی نہیں مل پاتا ہے۔انہیں پانی کے لئے پڑوسی کا سہارا لینا پڑتا ہے۔آئینی بنچ نے پینے والے پانی سے متعلقہ افسروں کو دھمکی بھرے لہجے میں کہا کہ اگر جلد ہی پینے والے پانی کا مستقل طور پر حل نہیں نکالا گیا تو متعلقہ افسروں کوروزانہ کورٹ کا چکر لگانا پڑیگا۔
ایڈوکیٹ دینو کمار نے ایک مفادعامہ عرضی داخل کر یہ معاملہ اٹھایا تھا۔کورٹ سے انہوں نے کہا کہ 11ضلع کی892بستیوں میں کیمیکل ملاہواپانی کی فراہمی ہورہی ہے۔اس سے لوگ بیمار ہو رہے ہیں ۔اس پر کورٹ نے ریاست کے سبھی میونسپل کارپوریشن اور ٹاؤن ڈیولپمنٹ ڈپارٹمنٹ سے جواب مانگا ہے ۔کورٹ نے ان کو چار ہفتے کا وقت دیا ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *