لالو کی بیٹی ہے، اسے راون کی بہن بنادیا

Share Article


کئی سیاست داں بولتے وقت اس بات کو بھول جاتے ہیں کہ ان کے بولے ہوئے الفاظ کسی کے وقار کو مجروح کرسکتے ہیں ۔بعد میں جب دیکھتے ہیں کہ معاملہ طول پکڑ رہا ہے تو یا تو لفظوں کو توڑ مروڑ کر بتانے کی کوشش کرتے ہیں یا پھرمعافی مانگ لیتے ہیں ۔
جنتا دل یو کے ایک لیڈر کے ایک بیان نے بہار کے سیاسی ماحول میں ہلچل مچا دی ہے۔ اب بات کیس مقدمے تک پہنچنے والی ہے۔ دراصل لالو پرساد کی بڑی بیٹی میسا بھارتی کو جنتادل یو کے ایم ایل سی اور پارٹی ترجمان نیرج کمار نے راکشش راون کی بہن سے تشبیہ دے دی۔ انہوں نے اپنے بیان میں نہ صرف میسا کو نشانہ بنایا بلکہ یہ بھی کہہ دیا کہ ہندوستان کی سیاسی روایت سے ہٹ کر راشٹریہ جنتا دل کے سپریمو نے اپنے بڑے بیٹے تیج پرتاپ کو نظر انداز کرکے چھوٹے بیٹے تیجسوی کو اپنا جانشیں بنالیا۔
انہوں نے چٹکی لیتے ہوئے کہا کہ رامائن میں بھرت نے جنگل کا سفر کیا اور لارڈ رام سے واپسی کی گزارش کی تھی لیکن آج تو معاملہ بالکل ہی الٹ گیا ہے۔ چھوٹا بھائی اس پوزیشن میں آگیا ہے کہ حکمرانی کرے اور بڑا بھائی جلا وطنی میں جی رہا ہے اور شور پنکھا (راون کی بہن)چھوٹے سے خطے سے بھی محروم کردی گئی ہیں۔حالانکہ جنتا دل یو کے لیڈر نے کسی کانام نہیں لیا ہے مگر ان کے بیان میں اشارہ اسی طرف ہونے کا گمان ہوتاہے۔
نیرج کمار کے ٹویٹ پر سخت نوٹس لیتے ہوئے تیج پرتاپ کہتے ہیں کہ بہار کے وزیر اعلیٰ اور جنتا دل یو کے صدر نتیش کمار کے پاس سمجھ کی کمی ہے ۔انہیں چاہئے کہ وہ اپنے ترجمان کو سمجھائیں کہ بولتے وقت ہوش بحال رکھیں اور بولنے سے پہلے مشق کرلیا کریں کہ کون سی بات کیسے کرنی ہے ۔ورنہ انہیں عدالت تک گھیسٹا جاسکتا ہے

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *