روس کی سابق ملکہ حسن سے شادی پڑی مہنگی ؟

Share Article

ملیشیا کے بادشاہ سلطان محمد پنجم نے ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ تخت سے دست برداری کا اعلان کر دیا۔خبر ایجنسی اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق 1957 میں برطانیہ سے آزادی کے بعد پہلی مرتبہ مسلم اکثریتی ملک ملیشیا کے بادشاہ عہدے سے دست بردار ہوئے ہیں۔

 

 

سعودی عرب سے بھاگی 18سال کی لڑکی نے کہا، اسلام چھوڑ دیا، پریوار مارڈالیں گے

 

ملیشیا کے بادشاہ سلطان محمد پنجم نے ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ تخت سے دست برداری کا اعلان کر دیا۔خبر ایجنسی اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق 1957 میں برطانیہ سے آزادی کے بعد پہلی مرتبہ مسلم اکثریتی ملک ملیشیا کے بادشاہ عہدے سے دست بردار ہوئے ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق شاہی محل کے نگران وان احمد داہلان عبدالعزیز کے دستخط سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ملیشیا کے معزز بادشاہ نے عوام کو اتحاد، رواداری اور مل جل کر کام کرنے کی تلقین کی ہے۔تاہم شاہی حکام کی جانب سے استعفیٰ کی کوئی وجوہات بیان نہیں کی گئیں جس کے باعث سلطان پنجم کے استعفیٰ پر سوال اٹھایا جارہا ہے۔

 

 

ہزاروں میٹر مربع میں بنے مکان پر چڑھا دیا جے سی بی

 

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ بادشاہ کے اچانک استعفیٰ کی دو وجوہات ہوسکتی ہیں۔ پہلی نومنتخب وزیراعظم اور بادشاہ کے درمیان اختلافات ہیں اور دوسری وجہ بادشاہ کی شاہی خاندان کی مرضی اور روایات کے برخلاف مس ماسکو سے شادی کرنا ہے۔ خیال رہے کہ سوشل میڈیا پر بادشاہ کی روس میں سابق مس ماسکو کے ساتھ شادی کی خبروں کا چرچا بھی رہا تھا ۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *