چراغ کوبجھانے کیلئے آندھی کی تلاش میں مہاگٹھ بندھن

Share Article
lalu-chirag
اب یہ لگ بھگ طے ہے کہ رام ولاس پاسوان کے بیٹے چراغ پاسوان جموئی سے ہی ایک بارپھردہلی جانے کا ٹکٹ لیں گے۔تیاری بھی شروع ہے اورحمایتی بھی یہ مان کرچل رہے کہ چراغ کا جموئی سے الیکشن لڑنا طے ہے۔اس لحاظ سے مہاگٹھ بندھن نے بھی جموئی کیلئے اپنا خاکہ کھینچنا شروع کردیاہے۔ بتایاجارہاہے کہ لالوپرساد کی یہ سوچ ہے کہ تیجسوی کے مقابلے بہارمیں کوئی نیانوجوان قیادت کونہیں ابھرنے دےئے جائیں۔تیجسوی اگرجیت جاتے ہیں توپارلیمنٹ میں ان کی دوسری پاری ہوگی اورآنے والے اسمبلی الیکشن میں وہ تیجسوی کیلئے ایک بڑا سردرد ثابت ہوسکتے ہیں۔
وہ چاہتے ہیں کہ جموئی سے کوئی نیاچہرہ انتخابی اکھاڑے میں چرا غ کا مقابلہ کرے۔ادے نارائن چودھری اوربھودیوچودھری پہلے بھی جموئی سے الیکشن لڑچکے ہیں۔ادے نارائن چودھری کولیکر جموئی کے اگڑی برادریوں میں اچھی رائے نہیں ہے۔ لالو پرساد ہرحال میں جموئی میں اعلیٰ ذات ووٹروں کی تقسیم چاہتے ہیں۔اس لحاظ سے بتایاجارہاہے کہ لالوپرساد ہندوستان عوام مورچہ(ہم) کے سربرہ جیتن رام مانجھی سے جموئی سے الیکشن لڑنے کا درخواست کرسکتے ہیں۔آرجے ڈی کی سوچ ہے کہ مانجھی ووٹروں کی اچھی آبادی اوراپرکاسٹ ووٹروں میں ان کی اچھی ساکھ کا فائدہ مل سکتاہے۔اسلئے پوری کوشش ہورہی ہے کہ جتین رام مانجھی کوہی چراغ کوبجھانے کے لئے جموئی کے اکھاڑے میں اتارا جائے ۔اگربات نہیں بنی توپھرکسی نئے چہرے پر بھی داؤ لگایاجاسکتاہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *