اس شہرمیں ہوتاہے ہر چوتھے دن ایک ریپ 

Share Article
rape-victim demo
ویسے توملک کے ہرشہراورہرعلاقے میں عصمت دری کے معاملات سامنے آتے رہتے ہیں۔نہ جانے کچھ درندصفت لوگ ایسی حیوانیت کرنے بازکیوں نہیں آتے ہیں۔ نہ جانے کیوں ان درندصفت لوگو ں کو اس خاتون میں اپنی بہن، ماں اوربیٹی کاچہر ہ نہیں نظرآتاہے۔سوال یہ ہے کہ آخران لوگوں کوپولس کابھی خوف کیوں نہیں ہے؟آئے دن ،معصوم بچیوں ،لڑکیوں اورخواتین کی عزت کے ساتھ کھلواڑہوتارہتاہے۔
اپ یہ جان کر دنگ رہ جائیں گے کہ یو پی کے کانپور ضلع میں ہر چوتھے دن ایک ریپ کا معاملہ پیش آتا ہے۔پولیس ریکارڈ میں درج اعدادوشمار کی جانچ کرنے کے بعد یہ سچائی سامنے آئی ہے،جبکہ زیادہ تر معاملوں میں پولیس شکار ہوئے خاندانوں کی شکایت پر زیادہ دھیان نہیں دیتی ہے ،یہ پھر شکار ہوئے لوگ اپنی عزت بچانے کے لئے خود ہی شکایت درج کرانے کے لئے تھانے نہیں جاتے ہیں۔سال 2018میں کانپور ضلع کے مشرق ،مغرب،جنوب،شمال کے علاقوں کے تھانے میں 82ریپ کے معاملات درج ہوئے ہیں۔
نئے سال کوچار دن ہی گزرے ہیں اور ریپ کے تین معاملہ سامنے آچکے ہیں۔1جنوری کو بہلور میں 10ویں کلاس کی طالبہ کی پی ایچ سی میں ایک لڑکے نے عصمت دری کی۔تھانہ ریل بازار کے فیتھ فل گنج میں 2جنوری کو بچی کو ٹافی دلانے کے بہانے ایک شخص نے اپنی ہوس شکاربنایا۔ابھی چوتھے دن دل دہلا دینے والا معاملہ سامنے آیا ہے جس میں کدوائی نگر کے ایک شخص نے ضعیف العمرخاتون کی عصمت دری کی اور اس واقعہ کے بعد ان کی موت ہو گئی۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *