چلتی ٹرین میں بی جے پی لیڈر کا قتل 

Share Article


کبھی کبھی عجیب واقعہ ہوجاتا ہے جس پر یقین کرنا مشکل ہوتا ہے۔ چلتی ٹرین میں ایک لیڈر کا قتل ہوجاتا ہے اورکسی کو کانوں کان خبر نہیں ہوتی ہے۔ حیرت کی بات یہ ہے کہ کوچ کا کوئی بھی مسافر فائرنگ کی آواز نہیں سنتا ہے۔ یہ حادثہ بی جے پی لیڈر جینتی بھنشالی کے ساتھ پیش آیا۔انہیں دو بجے صبح میں اس وقت گولی ماری گئی جب ان کی ٹرین چل رہی تھی۔انہیں مالیا اسٹیشن کے پاس نامعلوم افراد نے گولی مار دی۔ ان کے رشتہ داروں کا کہنا ہے کہ سیاسی تنازع کی وجہ سے انہیں گولی ماری گئی ہے اور اس کی ذمہ داری شابل پاٹل پر عائد ہوتی ہے۔ریلوے پولیس معاملے کی تفتیش کررہی ہے۔
ریلوے پولیس کے مطابق بھنشالی سایا جی نگری ایکسپریس میں سفر کررہے تھے۔ یہ ٹرین بھوج سے دادر ،ممبئی جارہے تھے۔وہ فرسٹ اے سی کوچ میں تھے اور احمد آباد جارہے تھے۔ ان کو وگولی مارنے کی اطلاع اس وقت ملی جب ٹکٹ چیکر وہاں پر آیا تو اس نے وہاں پر خون دیکھا۔عجیب بات یہ ہے کہ مسافر میں سے کسی نے بھی فائرنگ کی آواز نہیں سنی

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *