لڑکی نے ’آئی ایم سوری پاپا‘لکھ کرفیملی کوہمیشہ کیلئے الوداع کہا

Share Article
demo-pic
ایک 16سال کی لڑکی نے پچھلے اتور کی رات بھوپال کے گوتم نگر میں ایک تین منزلہ گھر سے چھلانگ لگاکر خودکشی کرلی۔آناً فاناً میں پڑوسیوں نے اسے اسپتال میں داخل کرایا اوراطلاع ملنے پرموقع واردات پرپولس بھی پہنچی ۔پولیس نے بتایاکہ موقع واردات پر کوئی سوسائڈ نوٹ نہیں ملا لیکن لڑکی کے بائیں ہاتھ کی ہتھیلی پر آئی ایم سوری پاپا(I am Sorry Papa)، لکھا ہوا تھا جس کے بعد پولیس کو شروعاتی جانچ میں یہی لگ رہا ہے کہ لڑکی نے خودکشی کی ہوگی۔لڑکی ایک پرائیویٹ اسکول میں 11ویں کلاس کی طالبہ تھی ۔جانچ آفیسر اے ایس آئی رمیش چندر دریویدی نے کہا کی اتوار کو جب لڑکی کوچنگ سے گھر واپس آئی تو وہ کچھ پریشان لگ رہی تھی ۔اس نے کسی سے پریشانی کی وجہ نہیں بتائی اور گھر سے باہر چلی گئی۔
پولیس کا ماننا ہے کہ لڑکی اپنے پڑوسی کی چھت پر گئی اور رات 8.30پر چھت سے چھلانگ لگا دی اور 32فٹ نیچے زمین پر جا گری ۔زور کی آواز سن کر پڑوسی دنگ رہ گئے اور جب انہوں نے باہر جاکر دیکھا تو لڑکی زمیں پر اوندھے منھ گری پڑی تھی اور اس کے سر پر شدید چوٹ لگی ہوئی تھی ۔پڑوسی لڑکی کو ایک پرائیویٹ اسپتال میں لے گئے جہاں سے اس لڑکی کو حمیدیہ اسپتال ریفر کردیا گیا ۔یہاں علاج کے دوران اس لڑکی کی وفات ہوگئی ۔اس کے والد ایک اسٹیٹ آن کمپنی کے ساتھ کام کرتے تھے ۔گوتم نگر کے ایس ایچ او مہندر مشرا نے بتایا کہ اب تک کوئی سوسایڈ نوٹ برآمد نہیں ہوا ہے جس کی وجہ سے وہ یہ بات پتہ نہیں لگا پا رہے ہیں کہ کڑکی نے خودکشی کیوں کی۔پولیس لڑکی کے ساتھ پڑھنے والوں،خاندان والوں اور دوستوں کے بیانات ریکارڈ کرئے گی تاکہ اسکی خودکشی کے پیچھے کیا راز ہے؟ وہ پتہ لگایا جا سکے ۔مزید پولیس طالبہ کے فون کی بھی جانچ کرئے گی۔ہوسکتاہے کہ طالبہ کے موبائل سے ہی خودکشی کی وجہ کاپتہ چل جائے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *