2019لوک سبھاالیکشن:این سی پی کی سیٹوں سے الیکشن لڑنا چاہتی ہے راج ٹھاکرے کی پارٹی

Share Article
sharad-pawar-and-raj-thakre
مہاراشٹر میں بی جے پی کوروکنے کیلئے مہاگٹھ بندھن ہرطرح کی کوششوں میں مصروف ہے۔گٹھ بندھن میں اب تک کئی چھوٹی پارٹیوں کوبھی شامل کیاجاچکاہے۔شردپوارلگاتار راج ٹھاکرے کی پارٹی مہاراشٹرنونرمان سینا کوبھی اندرلانے کیلئے پوری کوشش کررہے ہیں۔لیکن کانگریس نہیں چاہتی ہے کہ راج ٹھاکرے کی پارٹی کی وجہ سے ان کا بچاہوا شمال ہندوستانی ووٹ بی جے پی کی طرف چلاجائے۔اس بیچ راج ٹھاکرے نے بھی موقع کا فائدہ اٹھانے کی پوری کوشش شروع کردی ہے۔
حال کے دنوں میں ایم این ایس سربراہ راج ٹھاکرے اوراین سی پی سربراہ شرد پوار کی نزدیکیا لگاتاربڑھی ہے۔ شردپوارکی کوشش کودیکھتے ہوئے راج نے ان کے سامنے این سی پی کوٹے کی تین سیٹیں مانگ لی ہیں۔ راج ٹھاکرے کی پارٹی کی طرف سے بالا ناندگاؤنکراین سی پی سے بات کررہے ہیں۔اس بیچ بات چیت میں ایم این ایس نے شرد پوارکی پارٹی این سی پی سے تین سے چارسیٹوں کی مانگ کررہی تو این سی پی ایک سے دوسیٹیں ایم این ایس کودینے پرمثبت طریقے سے غوروخوض کررہی ہے۔
راج ٹھاکرے چاہتے ہیں کہ این سی پی انہیں اپنے کوٹے کی ممبئی کی شمال مشرقی، ٹھانے اورناسک کی سیٹ دے۔جبکہ این سی پی نے زیادہ ترسیٹوں پراپنے امیدواروں کی لسٹ فائنل کرلی ہے اوران کے لیڈرتشہیرمیں بھی لگ گئے ہیں۔ این سی پی ٹھانے لوک سبھاسیٹ ایم این ایس کودینے کوتیارہے۔بنیادی طورپرفی الحال دونوں پارٹیاں اس خبرکی کوئی تصدیق نہیں کرناچاہتی ہیں۔شرد پوارکویہ حساب ہے کہ اگرمہاگٹھ بندھن میں ایم این ایس ساتھ آتی ہے توشہری علاقوں میں کانگریس -این سی پی کوفائدہ ہوسکتاہے۔ اتنا ہی نہیں راج ٹھاکرے کی پارٹی شیوسینا بی جے پی کے مراٹھی ووٹ بینک میں بڑی سیندھ ماری کرسکتی ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *