کسے رہتاہے کرسمس کا انتظار

Share Article
children
25دسمبرکوعیسائی برادری کرسمس کا تہوارمناتی ہے۔ کرسمس کا شمار عیسائی مذہب کے قدیم ترین تہواروں میں ہوتا ہے‘ جو پیغمبر خدا حضرت عیسیٰ علیہ السلام کی ولادت پرمنایا جاتا ہے۔کرسمس یعنی خوشیوں کا، آپسی میل جول کا تہوار، وہ تہوارجوسال کے اخیرمیں منایاجاتاہے۔کہنے کوتویہ عیسائیوں کا تہوارہے لیکن سبھی دھرموں کے لوگ اسے بڑی دھوم دھام سے مناتے ہیں۔اس دن لوگ آپس میں تحفہ تقسیم کرتے ہیں اورسب کے گھروں میں خاص ٹری کوسجایاجاتاہے۔
کرسمس کا انتظارسب سے زیادہ بچوں کوہوتاہے۔کیوں کہ اس موقع پربچوں کوگفٹ ملتاہے۔جس طرح عید میں بچوں کوعیدی ملتی ہے ،اسی طرح کرسمس پربچوں کوتحائف ملتے ہیں۔کرسمس کے اس پرمسرت موقع پر سانتا کلاز کے روپ میں ایک شخص بچوں میں کھلونے اور دیگر تحائف بھی تقسیم کرتا ہے۔ نیز مسیحی اس دن کو بڑا دن یا بڑی عید بھی قرار دیتے ہیں۔
24اور 25دسمبر کی درمیانی رات مسیحی برادری کے افراد اپنی عبادت گاہوں میں جمع ہوتے ہیں جہاں اس دن کی یاد تازہ کی جاتی ہے اور مختلف تاریخی واقعات کو چھوٹے چھوٹے ڈراموں کی صورت میں پیش کرکے دہرایا جاتا ہے۔ اس موقع پر دنیا بھر کے حکمرانوں اور عوام کی خیر و عافیت کیلئے خصوصی دعائیں مانگی جاتی ہیں تاکہ دنیا سے جنگ نفرت دہشت گردی جھگڑے ختم ہوں اور تمام انسان خلوص پیار و محبت سے آپس میں مل جل کر رہتے ہوئے امن قائم کریں۔
کرسمس تہواردنیا کے تمام ملکوں میں مختلف طریقوں سے منایا جاتا ہے۔ عبادات کرنا، کیک کاٹنا، کرسمس ٹری سجانا، چرنی کی تیاری، کرسمس کینڈل روشن کرنا، میٹھے پکوان بنانا، دعوتوں کا انعقاد کرنا، سانتا کلاز اورتحفے تحائف کی تقسیم کرسمس کے حوالے سے خاص اہمیت کے حامل ہوتے ہیں۔25دسمبرکوگرجا گھروں میں خصوصی عبادات اور دعائیہ تقریبات میں ملکی ترقی، قیام امن اور سلامتی و خوشحالی کی خصوصی دعائیں مانگی جائینگی ۔ اس دن لوگ نئے کپڑے پہنتے ہیں اورملنے پرلوگ ایک دوسرے کوکرسمس کی مبارکباددیتے ہیں۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *