امت کو آپسی اختلافات بھلا کر متحد ہونے کی ضرورت :امیر جماعت اسلامی ہند 

Share Article
maulana-jalaluddin-umri
جماعت اسلامی ہند حلقہ دہلی و ہریانہ کی جانب سے مروڑا گاؤں ،ضلع نوح میں ایک عظیم الشان اجلاس کا انعقاد کیا گیا ۔جس کی صدارت امیر جماعت اسلامی ہند سید جلال الدین عمری نے کی ۔اجلاس عام کا موضوع ’’اسلام آپ سے کیا چاہتا ہے ‘‘۔اجلاس کا افتتاح تابش مہدی کی تلاوت قرآن و ترجمہ سے ہوا ۔ضمیر اللہ فلاحی نے نعت پاک پیش کی ۔امیر حلقہ دہلی وہریانہ عبدالوحید نے افتتاحی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مسلمانوں کو تمام لوگوں کیلئے انتہائی نرم ہونا چاہئے ،والدین کے حقوق بیوی بچے ،پڑوسیوں کے حقوق مکمل طور سے ادا کرنا چاہئے ۔کیونکہ مسلمان ہونے کے ناطے یہ ہم پر فرض ہے اور یہی اللہ کا حکم بھی ہے ۔
ڈاکٹر قاسم رسول الیاس رکن مرکزی مجلس شوری و رکن آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اللہ کا لاکھ لاکھ شکر ہے کہ اس نے ہمیں مسلمان بنایا اور اس کا تقاضا یہ ہے کہ پورے دین پر عمل کیا جائے ۔ہماری عبادت ،ہمارا کاروبار ،ہمارے لین دین ،اور اخلاق سب اس دین کے مطابق ہونا چاہئے ۔انہوں نے مزید کہا کہ ہم نبی ؐ کی امت ہیں ہماری ذمہ داری ہے کہ اس دین کو اللہ کے بندووں تک پہنچائیں ۔اس ملک میں جس طرح ظلم وزیادتی بڑھتی جا رہی ہے ہمیں چاہئے کہ ہم خاموش نہ بیٹھیں بلکہ اس ظلم وزیادتی کے خلاف آواز اٹھائیں یہ ہماری دینی ذمہ داری بھی ہے ۔
صدارتی خطاب کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی ہند مولاناسید جلال الدین عمری نے کہا کہ اللہ کے انسان پر بے پناہ احسانات ہیں جس کا شکر ادا کرناانسان کے لئے ممکن نہیں ہے ۔اور اس دین بڑا کوئی احسان نہیں ہو سکتا ،دین کے بغیر بادشاہ بھی فقیر ہے ،اور اگر دین ہو تو فقیر بھی بادشاہ ہے۔مولانا مزید کہا کہ اس امت کو آپسی اختلافات بھلا کر ایک ہو جانا چاہئے ،کیونکہ ہماراقرآن بھی ایک ،رسول بھی ایک ہے تو ہم سب کو بھی ایک ہی ہو کر رہنا چاہئے ۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *