اے ایم یو: گرلس اسکول میں جلسہ سیرت النبیؐ منعقد

Share Article
Jalsa-e-seerat-un-nabi
علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو)کے گرلس اسکول میں حسبِ روایت سیرت النبیؐ کا جلسہ منعقد کیا گیا جس کا آغازمریم عبداللہ کی تلاوتِ کلامِ پاک سے ہوا جس کے بعد انّما اور گروپ نے بارگاہِ ایزدی میں حمد’’تو ہی تو گلوں میں‘‘ پیش کی اور اسکولی طالبات نے اپنی تقاریر میں نبی اکرمؐ کی سیرتِ طیبہ اور سنتِ مطہرہ پر روشنی ڈالی۔ ارم و گروپ نے نعت’’ حضور لاجواب ہیں‘‘ شیبا فاطمہ نے نعت’’ کسی مجلس میں جب نعتِ‘‘عرشی و گروپ نے ’’ وہ شمع اجالا جس نے کیا‘‘ بشریٰ نے نعت’’ کون شہرِ مکہ میں‘‘بشریٰ اور گروپ نے نعت’’ دلوں کی آسودگی‘‘ انّما نے نعت’’ سوچئے تو ذرا‘‘ شیبا اور گروپ نے نعت’’افضل ہیں مرے آقا‘‘ انّما اور گروپ نے نعت’’ آئے نبی تو ہنر بولنے لگے‘‘ پیش کیں جبکہ ماریہ افسر، بصرا رضوی، علماء رضوی اور ادیبہ نے سیرت طیبہؐ پر مضامین پیش کئے۔
پروگرام میں وائس چانسلر کی اہلیہ ممتاز ماہرِ امراضِ اطفال ڈاکٹر حمیدہ طارق نے مہمانِ خصوصی اور پرو وائس چانسلر کی اہلیہ محترمہ پروین شاہدہ واسکول ایجوکیشن ڈائرکٹوریٹ کے ڈائرکٹر کی اہلیہ محترمہ تنویر اسفر نے اعزازی مہمانان کے طور پر شرکت کی۔ ڈاکٹر حمیدہ طارق نے طالبات کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے کہا کہ گرلس اسکول کی طالبات ہر میدان میں اسکول اور اے ایم یو کا نام روشن کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حضرت محمدؐ کی سیرت طیبہ کو اپنی زندگی میں ڈھال کرہی ایک کامیاب زندگی گزاری جا سکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حضرت محمد ؐ نے دنیا کو نہ صرف زندگی بسر کرنے بلکہ دونوں جہان میں توقیر حاصل کرنے کا نسخہ بتایا اور دنیا میں سب سے پہلے نبی اکرمؐ نے ہی حقوقِ انسانی کا کامیاب خاکہ پیش کیا جس پر بعد میں ساری دنیا عمل پیرا ہے۔
اسکول کی پرنسپل محترمہ آمنہ ملک، کلچرل انچارج محترمہ عرشی ظفر خاں، زیبا نواز، نور افشاں عثمانی، سیما اشفاق، امتیاز عالم اور شعیب رضا نے جلسہ کے اہتمام میں اہم رول ادا کیا۔ بشریٰ اور شیبا نے منظوم دعا اور رفا فاطمہ نے نثری دعا پیش کی۔آخر میں سلام کا بھی اہتمام کیا گیا۔ پروگرام میں بڑی تعداد میں اسکول اساتذہ، طالبات اور اسکول اسٹاف اراکین نے شرکت کی۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *