تیج پرتاپ یادونے بیوی ایشوریہ کے خلاف دی طلا ق کی عرضی،جانیں وجہ

tejpratap
راشٹریہ جنتادل(آرجے ڈی) سربراہ لالوپرساد یادو کے بڑے بیٹے نے اپنی چھ مہینے ایشوریہ کے ساتھ ہوئی شادی سے ناطہ توڑنے کا فیصلہ کرتے ہوئے جمعہ کوطلاق کی عرضی دی ۔ان کے اس فیصلے نے کنبہ اورپارٹی کارکنان کوحیران کرکے رکھ دیا۔ذرائع کے مطابق، تیج پرتاپ کے وکیل نے طلاق کیلئے آپسی اتفاق نہ ہونے کا سبب بتایاہے۔ تیج پرتاپ کے وکیل یشونت کمارشرما نے کہاکہ ’’ میں اس بارے میں زیادہ جانکاری نہیں دے سکتاہوں۔ مجھے میرے کلائنٹس نے صرف اتناہی بتایاکہ ان کے اوران کی بیوی کے بیچ آپسی تال میل نہیں بن پارہاہے اسلئے و ہ طلاق چاہتے ہیں‘‘تیج پرتاپ کی طرف پٹنہ سول کورٹ میں طلاق کی عرضی فائل کرتے ہوئے وکیل یشونت کمار نے بتایاکہ ہندومیرج ایکٹ کی دفعہ 13اے کے تحت الگ رہنے کی مانگ کی گئی ہے۔ اس کے تحت جوڑے یکطرفہ طلاق مانگ سکتاہے۔بتایاجارہاہے کہ طلاق کی عرضی پرسماعت 29نومبرکوہوگی۔کنبہ کے لوگوں نے اس بارے میں کچھ بھی پتہ نہیں ہونے کے باتیں کہی۔بہن میسابھارتی نے کہاکہ اس عرضی کے بارے میں مجھے معلوم نہیں ہے۔ میں پوری طرح سے حیران اورفکرمندہوں۔
ذرائع کے مطابق، طلاق کی عرضی میں انہو ں نے کہاکہ وہ ’کرشن‘ ہیں لیکن ان کی بیوی رادھا نہیں۔ وہیں دوسری طرف خبرہے کہ رابڑی دیوی اورایشوریہ کے کنبہ رات بھرصلح اورسمجھوتے کی کوشش کی ہے اورفیصلہ لیاگیاہے کہ ایشوریہ اپنے سسرال میں ہی رہیں گی۔ایسارابڑی دیوی کے کہنے پرہواہے۔
وہیں میڈیامیں آئی خبرکے مطابق تیج پرتاپ یادو اپنے والد لالویادو سے ملنے کیلئے رانچی گئے ہیں۔حالانکہ کنبہ کے اندر اس نئے تنازعہ نے کیسے جنم لیاہے اس کا ابھی تک کچھ بھی پختہ طورپرپتہ نہیں چل پایاہے۔خیال رہے کہ تیج پرتاپ کی شادی ایشوریہ کے ساتھ 12مئی کوہوئی تھی۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *