فلم ’بھیاجی سپرہٹ‘ :سنی دیول کامیڈی اورایکشن سے ناظرین کوانٹرٹینمنٹ کریں گے

bhaiyyaji-superhit
بالی ووڈ کے معروف اداکارسنی دیول کامشہورڈائیلاگ ’’جب یہ ڈھائی کلو کا ہاتھ اْٹھتا ہے تو پھر کوئی اور اْٹھتا نہیں، اْٹھ جاتا ہے‘‘ ،’’تاریخ پر تاریخ‘‘آپ کو یاد ہی ہوگا۔اس میں ایک اورزبردست ڈائیلاگ ’’ہم نتیجوں کوسوچ کر فیصلہ نہیں کرتے‘‘ شامل ہوگیا ہے۔ یہ ڈائیلاگ ہے فلم ’’بھیاجی سپرہٹ ‘‘ کا۔ویسے بالی ووڈاداکار سنی دیول کے ’’ ڈھائی کلو کے ہاتھ‘‘ سے تو کروڑوں لوگ واقف ہیں تاہم اس کا استعمال وہ کم ہی کرتے ہیں۔سنی تو کافی ٹھنڈے مزاج کے حامل ہیں۔
جہاں سنی دیول کی دوفلمیں رکی ہوئی تھی وہیں دونوں کے ہی ٹریلر ایک ساتھ سامنے آئے ہیں۔آپ کوبتادیں کہ سنی کی ’محلہ اسی‘ کا ٹریلر ہال ہی میں ریلیزہواہے،جسے ناظر ین نے کافی پسند کیاہے۔اسی کے ساتھ فلم ’بھیاجی سپرہٹ‘ کا بھی ٹریلر سامنے آیاہے۔دونوں ہی فلم الگ طرحکی ہیں۔ ایک سنگین وسیرئس مسئلے پرہے تو دوسری کامیڈی اورایکشن ہونے والی ہے۔فی الحال ہم بات کرتے ہیں بھیاجی سپرہٹ کی۔
بالی وو ڈ اداکار سنی دیول ، پریتی زنٹا اورامیشا پٹیل اسٹارر فلم ’بھیاجی سپرہٹ‘ کا ٹریلر ریلیز کردیاگیا ہے۔ ٹریلر سے صاف ہے کہ فلم میں ایکشن کے دھماکوں کے ساتھ ساتھ بھرپور کامیڈی بھی ہے۔فلم میں سنجے مشرا، شریاس تلپڑے اور ارشد وارثی بھی اہم کردار میں ہیں۔نیرج پاٹھک کی ڈائریکشن میں بنی یہ فلم 23نومبر کو ریلیز ہوگی۔ ڈمپل گرل اداکارہ پریتی زنٹا ان کی بیوی سپنا دوبے کے کردار میں ہیں۔جبکہ امیشاپٹیل بھی اہم کردارمیں ہیں۔ ارشد وارثی اورسنجے مشرا فلم اچھے کامیڈی کرتے دکھیں گے۔
ٹریلرمیں’ہم نتیجوں کوسوچ کر فیصلہ نہیں کرتے‘ اس لائن کے ساتھ سین میں انٹری لینے والے سنی دیول کامیڈی ، ایکشن اورڈبل رول کا مسالہ لیکر آنے والے ہیں۔یہ پہلی بار ہے جب سنی دیول ڈبل رول میں نظرآئیں گے۔سنی کا ساتھ دے رہی ہیں پریتی زنٹا۔پریتی فلم میں سنی دیول کی بیوی اورایک دیہاتی خاتون کے رول میں ہیں۔وہ رومانس کرنا بھی جانتی ہیں اورگولی چلانا بھی۔
سنی دیول نے اس فلم کوہٹ کوکرانے کیلئے سبھی مسالوں کا استعمال بخوبی کیاہے۔اس کا ایک اندازہ آپ کوفلم کے ٹریلر سے ہی مل جائے گا۔ فلم میں شاندار کامیڈی ٹائمنگ والے سنجے مشرا کے ہیں۔جواپنے اندازسے ناظرین کے دل میں اترجاتے ہیں۔ان کے علاوہ کئی ہٹ کامیڈی فلموںں کا حصہ رہے ارشد وارثی بھی ہیں۔وہیں ایکشن کی ذمہ داری سنی دیول نے خودسنبھالی ہے۔
سنی دیول یوپی میں ایک ایسے بہوبلی ہیں جوغنڈہ گردی کرتے ہیں لیکن ان کے دل میں اداکاربننے کی خواہش ہے۔’بھیاجی سپرہٹ‘ میں سنی دیول اداکاربننے کی کوشش کرتے ہیں ۔انہیں ہیرو بنانے آتے ہیں شریاس تلپڑے۔وہ فلم میں رائٹر کے رول میں ہیں۔فلم کے اندردوسری ’فلم ‘کی ہیرئین امیشاپٹیل ہیں۔امیشا کودیکھ کر آپ کولگے گا کہ وہ وہی سب کررہی ہیں جووہ اپنی پچھلی فلموں میں بھی کر چکی ہیں۔لیکن سنی دیول اورپریتی زنٹا کی جوڑی کافی فریش لگ رہی ہے۔
ٹریلر کی جوسب سے چونکانے وال بات ہے آخری سین۔اس سین میں سنی دیول کے ڈبل رول کا خلاصہ ہورہاہے۔ اب سنی کا یہ ڈبل رول ہی ہے جوناظرین کوفلم کی طرف کھینچ رہاہے۔ٹریلرمیں سنی دیول ڈبل رول میں نظرآرہے ہیں۔سنی دیول اور پریتی زنٹا فلم میں میاں بیوی کے کردارمیں ہیں جنہیں کافی عرصے بعد ایک ساتھ دیکھاگیاہے۔اس سے پہلے وہ ’دی ہیرو‘ میں ایک ساتھ نظرآئے تھے۔ویسے طویل عرصے کے بعد پریتی زنٹا فلموں میں واپس آئی ہیں۔’بھیاجی سپرہٹ‘ کی بات کریں توفلم کااعلان سال 2012 میں ہی کردیاگیاتھا لیکن فلم میں دیری ہوتی گئی۔ سنی دیول کی یہ فلم 6سال سے اٹکی پڑی تھی۔
ایکشن اور رومانی کرداروں سے لے کر بالی وڈ میں سکرین پر اپنی شاندار آمد اور بلند انداز کے لئے پہچانے جانے والے سنی دیول کی الگ ہی جگہ ہے۔9 اکتوبر1956ء میں نئی دہلی میں پیدا ہونے والے سنی کا دور بھلے ہی ہندی فلموں میں اب بدل چکے ہوں لیکن ان کی مقبولیت آج بھی قائم ہے۔ سنی دیول کا اصلی نام اجے سنگھ دیول ہے۔ چونکہ ان کا خاندان انہیں پیار سے سنی کے نام سے بلاتا تھا تو آگے چل کر فلموں میں شہرت بھی سنی نام سے ہی ملی۔
سنی دیول کا شمار ان منتخب اداکاروں میں کیا جاتا ہے جنہوں نے تقریباً تین دہائی سے اپنی بااثر ادا کاری کی بدولت شائقین کے دلوں میں آج بھی ایک خاص مقام بنارکھا ہے۔
سنی نے اپنے کیریئر کی شروعات اپنے والد کی بنائی فلم ’بیتاب‘ سے کی۔1983میں راہل رویل کی ہدایت میں بنی یہ فلم سپر ہٹ ثابت ہوئی ۔ فلم بے تاب کی کامیابی کے بعد سنی دیول کو سوہنی مہیوال، منزل منزل، سنی جیسی زبردست فلموں میں کام کرنے کا موقع ملا لیکن ان میں سے کوئی فلم باکس آفس پر کامیاب نہیں ہوسکی۔
1985 میں سنی دیول کو ایک بار پھر سے راہل رویل کی ہدایت میں بنی فلم ’ارجن‘ میں کام کرنے کا موقع ملا جو ان کے کیریئر کی ایک اور سپر ہٹ فلم ثابت ہوئی۔ فلم ارجن کی کامیابی کے بعد سنی کی شبیہ اینگری ینگ مین اسٹار کے طورپر بن گئی۔ اس فلم کے بعد پروڈیوسروں، ہدایت کاروں نے زیادہ تر فلموں میں سنی دیول کی اسی شبیہ کو پیش کیا۔ ان فلموں میں سلطنت، ڈکیت، یتیم، انتقام، پال کی دنیا جیسی فلمیں شامل ہیں۔ویسے سال 1990 میں ریلیز ہوئی فلم’’گھائل‘‘ ان کے کیریئر کی اہم فلموں میں شمار کی جاتی ہے۔ فلم میں اپنی بہترین ادا کاری کیلئے سنی دیول کو بہترین اداکار کے طوپر فلم فیئر ایوارڈ کے ساتھ ساتھ قومی ایوارڈ سے بھی نوازا گیا۔
1991 میں ریلیز ہوئی فلم ’نرسمہا‘ سنی کے کیرئیر کی سپرہٹ فلموں میں شمار کی جاتی ہے۔ وہیں1993 میں ریلیز فلم ’دامنی‘ سنی کے فلمی کیریئر کی اہم کڑی ثابت ہوئی۔ 1993سے 1996 تک سنی کے کیریئر کیلئے برا وقت ثابت ہوا۔ اس دوران ان کی کئی فلمیں ناکام رہیں۔1997 میں ریلیز ہوئی فلم ’’بارڈر‘‘اور ’ضدی‘ کی کامیابی کے بعد سنی فلم انڈسٹری میں ایک بار پھر سے اپنی کھوئی ہوئی شناخت پانے میں کامیاب ہوگئے۔1999میں سنی دیول نے فلم ’دل لگی‘ کے ذریعہ فلم سازی اور ہدایت کاری کے میدان میں قدم رکھ دیا۔ سال 2001 میں ریلیز فلم ’غدر ایک پریم کتھا‘ بہترین فلم ثابت ہوئی۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *