شعبۂ انگریزی کی ریلے لٹریری سوسائٹی و گرلس اسکول میں سرسید کے یومِ پیدائش کے موقع پر مختلف پروگراموں کا انعقاد

Winners-students
علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو)کے بانی سرسید احمد خاں کے دو سو ایک ویں یومِ پیدائش کے موقع پر انگریزی شعبہ کی ریلے لٹریری سوسائٹی کے زیرِ اہتمام’’سرسید ہم سے ملنے آئے‘‘ عنوان سے ایک منی ناٹک پیش کیا گیا جس کا اسکرپٹ و ہدایت علینہ خاں کی تھی جبکہ فراز علی و طوبیٰ نے ان کو تعاون پیش کیا۔ ناٹک میں مختلف کردار ادا کرنے والے طلبہ و طالبات میں فراز، ماریہ شاہد، حماد حسن، عاکف سعید، سید منتضےٰ، علی اکبر، اریشہ، سیدہ زینب، عائشہ، خدیجہ، فضل رحمن، عبدالباری، زینب انصاری، حنا، حبہ، نوپُر، مرنالنی،فہد، حماد حسن، عمر حسین اور سیف حیدر شامل تھے۔
اس سے قبل مختلف فیکلٹیوں و شعبوں کے طلبہ و طالبات کی شرکت سے ایک کوئز مقابلہ بھی منعقد کیا گیا۔مذکورہ پروگراموں کاانعقاد ڈاکٹر عائشہ منیرہ رشید اور ڈاکٹر وبھا شرما کی مشترکہ نگرانی میں عمل میں آیا۔اس کے علاوہ اے ایم یو گرلس اسکول کی جانب سے سرسید دو صدی تقریبات کے تحت مختلف ادبی و ثقافتی اور کھیل کود کے مقابلے منعقد کئے گئے۔ اختتامی تقریب میں اسکول کی پرنسپل محترمہ آمنہ ملک نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہاکہ سرسید نے جدید تعلیم اور سائنسی مزاج کی اہمیت کو سمجھتے ہوئے ایم اے او کالج کی بنیاد رکھی ۔انہوں نے کہا کہ سرسید ایک عظیم مصلح تھے، ہمیں ان کے نقش قدم پر چلنا چاہئے اور ان کے پیغام کو عام کرنا چاہئے۔ پروگرام میں ریٹائرڈ ٹیچر ڈاکٹر صابر حسن نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔ نظامت کے فرائض صفیہ سلطانہ نے انجام دئے۔
اس موقع پر مختلف مقابلوں کے فاتحین اور شرکاء کو انعامات و سرٹیفیکٹ تقسیم کئے گئے۔ کلچرل کوآرڈنیٹر محترمہ عرشی ظفر خاں نے بتایا کہ انٹر ہاؤس کھیل مقابلوں میں ٹیبل ٹینس میں بلو ہاؤس نے یلو ہاؤس کو ہرایا۔ یوگا میں بلو ہاؤس نے گرین ہاؤس کو، باسکٹ بال میں گرین ہاؤس نے یلو ہاؤس کو، کبڈی میں گرین ہاؤس نے ریڈ ہاؤس کو، بیڈمنٹن میں ریڈ ہاؤس نے گرین ہاؤس کو، والی بال میں یلو ہاؤس نے گرین ہاؤس کو، کھو کھو میں ریڈ ہاؤس نے گرین ہاؤس کو اور کرکٹ میں ریڈ ہاؤس نے بلو ہاؤس کو ہرایا۔ اوورآل چیمپئن کا خطاب گرین ہاؤس نے جیتا۔
خطاطی مقابلہ میں اوّل انعام فضا زاہد ، دوئم انعام نازش نجم اور سوئم انعام دِوّیا راجپوت نے جیتا۔ آفرین، شبِ نور اور کاشف رضا کو خصوصی انعام دیا گیا۔ پورٹریٹ مقابلہ میں اوّل انعام اے ایم یو سٹی اسکول کے اُدّیشیا شرما نے، دوئم انعام اے ایم یو سٹی اسکول کے محمد فردین اور اے ایم یو گرلس اسکول کی
نکہت نے، جب کہ سوئم انعام ایس ایس ایس (گرلس) کی زویا اقبال نے جیتا۔ اس کے علاوہ صبیحہ خاں اور نیہا کماری کو حوصلہ افزائی انعام دیا گیا۔
مضمون نویسی مقابلہ میں اوّل انعام اے ایم یو گرلس اسکول کی عائشہ مریم اور شگفتہ فردوس انصاری نے جیتا۔ دوئم انعام سید حامد سینئر سکنڈری اسکول کے محمد شمس الدین اور سوئم انعام اے ایم یو سٹی اسکول کے صادق کلیم نے جیتا۔ حوصلہ افزائی انعام ایس ٹی ایس اسکول کے نتن وششٹھ کو دیا گیا۔
گریٹنگ کارڈ بنانے کے مقابلہ میں گروپ اے (یکم تا سوئم جماعت) میں اوّل انعام تحریم اور یسریٰ نے جیتا۔ دوئم انعام کلثوم زہرا اور انم رئیس نے اور سوئم انعام انشاء زبیر نے جیتا۔ اونتیکا سنگھ اور خدیجہ نوید کو حوصلہ افزائی انعام سے نوازا گیا۔ گروپ بی (چہارم تا پنجم جماعت) میں اوّل انعام عالیہ رضا اور وریشا نے، دوئم انعام اقصیٰ مستقیم اور شفا پروین نے اور سوئم انعام اقصیٰ نے حاصل کیا۔ اس کے علاوہ شفا ناز کو حوصلہ افزائی انعام دیا گیا۔ نظم خوانی مقابلہ میں اوّل انعام مائدہ، دوئم انعام شفا یامین اور سوئم انعام انم اعظم نے حاصل کیا۔ سلاد مقابلہ میں اوّل انعام صائمہ ایاز اور امّ ہانی حریم نے حاصل کیا۔ دوئم انعام زویا امجد ، شروتی شرما اور وِشاکھا نے جبکہ سوئم انعام لکشا راجپوت نے حاصل کیا۔ان کے علاوہ سیجل وارشنے، سُندس پروین اور امامہ رادیہ کو حوصلہ افزائی انعامات سے نوازا گیا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *