مذہبی بنیاد پر بچوں کے ساتھ تعصب ناقابل قبول : عبدالوحید

Abdul-wahid
جماعت اسلامی ہند حلقہ دہلی و ہریانہ کے امیر عبدالوحید نے دہلی کے ایم سی ڈی اسکول میں مذہبی بنیاد پر بچوں کو الگ الگ سیکشن میں تقسیم کرنے پر سخت رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ انتہائی قابل مذمت عمل ہے ۔اس طرح بچوں کے ساتھ تعصب برتناخطرناک ثابت ہو سکتا ہے۔بچے معصوم ہوتے ہیں اس کے ذہن میں کسی طرح کی برائی نہیں ہوتی ہے ،ان کے ذہن کو خراب کرنے کی کوشش کسی متعصب ذہنیت کے حامل لوگوں کا کام ہے ۔آج ملک میں اس وقت مذہبی بنیاد پر تعصب اور نفرت کا معاملہ گرم ہے ۔جو کسی بھی صحت مند معاشرہ کے لئیناقابل قبول ہے ۔اس نفرت کے ماحول میں ملک کی راجدھانی دہلی بھی اچھوتی نہیں رہی ،مذہبی بنیاد پر تعصب شروع ہو گیا ہے ۔یہ معاملہ ایک افواہ نہیں ہے بلکہ اساتذہ کے ایک گروپ نے باقاعدہ الزام لگایا ہے کہ وزیر آباد میں واقع ایک پرائمری اسکول میں ہندو اور مسلم طلبہ کو مذہب کی بنیاد پر الگ الگ سیکشن میں تقسیم کیا گیا ہے ۔جبکہ اسکول کے انچارج نے کہا ہے کہ صرف آٹھ سیکشن کو الگ کیا گیا ہے باقی میں سب مشترک ہیں ۔ان کی یہ دلیل قابل اطمینان نہیں ہے ۔
جماعت اسلامی ہند دہلی ،وزیر تعلیم منیش سسودیا سے اپیل کرتی ہے کہ وہ فوراً اسکول کا دورہ کریں اور اس معاملے کی جانچ کرائیں ۔تاکہ ملک کی راجدھانی مذہبی تعصب سے پاک رہے ۔جس نے بھی اس طرح کی مذموم کوشش کی ہے اس کے خلاف سخت کارروائی کی جائے ۔اس ملک میں درجنوں مذاہب کے لوگ ہیں سینکڑوں زبانیں بولی جاتی ہیں ،یہ ملک ایک گلشن کی مانند ہے جہاں ہر طرح کے پھول کھلتے ہیں تب جاکر یہ چمن کہلاتا ہے ۔یہاں کثرت میں وحدت پائی جاتی ہے ،یہی ہندوستان کی شان ہے ۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *