ایسی زبان جسے دنیا میں صرف تین لوگ بولتے ہیں

Badeshi
زبانوں کو زندہ رکھنے کے لئے سرکاری اور غیر سرکاری سطح پر بڑی کوششیں کی جارہی ہیں۔21 فروری کو دنیا بھر میں زبانوں کا عالمی دن منایا جاتاہے۔اس عالمی دن کے دوران ایسی زبانوں کے تحفظ پر خاص طور پر دھیان دیا جاتا ہے جن کے بولنے والے کم ہوگئے ہیں۔کیونکہ بولنے والوں سے ہی زبان زندہ رہتی ہے۔ اگر اس کے بولنے والے ختم ہوجائیں تو دھیرے دھیرے وہ زبان بھی ختم ہو جاتی ہے۔لیکن افسوسناک بات یہ ہے کہ دنیا میں ایک ایسی زبان بھی پائی جاتی ہے جو نہ صرف ختم ہونے کے قریب ہے بلکہ یہ کہنا بجا ہوگا کہ ختم ہوچکی ہے۔ یہ زبان سوات کی ایک برف سے ڈھکی، دشوار گزار وادی بشی گرام میں بولی جاتی ہے اور اس زبان کا نام بدیشی ہے۔
اب صورت حال یہ ہے کہ بدیشی کے بطور زندہ زبان باقی بچ جانے کے امکانات تو بہت کم نظر آتے ہیں۔ لیکن اگر ماہرین اس کی صوتیات اور صرف و نحو اور قواعد کا ریکارڈ ہی مرتب کر دیں تو کم از کم کتابوں کی حد تک اسے زندہ رکھا جا سکتا ہے اور زبانوں کو تحفظ دینے والوں کے لئے ایک بہترین تحفہ ہوگا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *