پھرحیوانیت،6لوگوں نے کی نابالغ لڑکی کے ساتھ اجتماعی عصمت دری

Gang-rape-general-pic
ہریانہ کے یمنانگرسے ایک حیوانیت کی خبرسامنے آئی ہے۔ دراصل ،یہاں ایک 13 سال کی بچی کے ساتھ اجتماعی عصمت دری کا معاملہ سامنے آیا ہے۔بتایاجارہاہے کہ ایک 13سال کی نابالغ لڑکی کے ساتھ 6لوگوں نے مبینہ طورپر اجتماعی عصمت دری کی۔نیوزایجنسی اے این آئی کے مطابق، یہ واقعہ5ستمبر2018کوپیش آیاہے۔ہریانہ پولس نے اس بات کی جانکاری دیتے ہوئے کہاکہ ہم نے معاملہ درج کرلیاہے۔ متاثرہ لڑکی کومیڈیکل جانچ کیلئے اسپتال بھیج دیاہے۔ پولس نے بتایاکہ ملزموں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ حالانکہ، ابھی اس معاملے کی جانچ چل رہی ہے۔
میڈیا رپورٹوں کے مطابق، بتایا جا رہا ہے کہ درندوں نے آبروریزی کی کوشش کی تو بچی نے ان کی مخالفت کی ،تودرندوں نے اس کی بازوں پر بلیڈ سے کٹ لگا دئے گئے۔ خون سے لتھ پتھ بچی دیر رات گھر پہنچی اور اپنے خاندان کو آپ بیتی سنائی۔ بعد میں خاندان والوں نے پولیس میں شکایت درج کرائی۔میڈیااطلاعات کے مطابق 5 ملزمین رشتہ میں متاثرہ بچی کے بھائی لگتے ہیں جبکہ ایک ملزم باہر کا تھا۔بہر کیف پولس نے معاملہ درج کر لیا اور ان کی تلاش کے لئے چھاپے ماری بھی شروع کر دی۔ سبھی ملزمین فی الحال فرار ہیں اور پولیس ان کے اہل خانہ سے پوچھ گچھ کر رہی ہے۔
آپ کوبتادیں کہ اس سے پہلے بھی ایسی واردات یمنانگر میں ہوچکی ہے۔ اسی سال اپریل مہینے میں چار نوجوانوں نے نابالغ لڑکی کے ساتھ دھرم شالہ میں حیوانیت کی۔چارلڑکوں نے گھرمیں سورہی لڑکی کومنہ میں کپڑا ٹھوس کرپہلے اغوا کیا، اس کے بعد گاؤں کے مذہبی مقام کی دھرم شالہ لے گئے ،یہاں لڑکوں نے لڑکی سے ریپ کیا۔

 

 

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *