شوہرنے پہلے بیوی کا ہاتھ توڑا، پھر دے دیا تین طلاق

NAAZNEEN
جھارکھنڈ کی راجدھانی رانچی میں تین طلاق کا معاملہ سامنے آیاہے۔ میڈیاپورٹس کے مطابق، کانکے تھانہ علاقے کے ملت کالونی میں پیرکی رات سجاد علی نے اپنی اہلیہ نازنین کوتین طلاق دے دیا۔ اہلیہ نے اس پرسوا اٹھایاتو شوہرنے گھرکا دروازہ اندرسے بندکردیا ۔اس کے بعد دوچھوٹے بچوں کے سامنے اس کی بے رحمی سے پٹائی کی۔اتناہی نہیں، ہتھوڑے سے مارکر ہاتھ بھی توڑدیا۔نازنین ہاتھ ٹوٹنے کے درد سے پوری رات کہراتی رہی اورسجاد علی آرام سے سوتارہا۔منگل کوکسی طرح تالاتوڑ کروہ باہرنکلی۔ نازنین والدکے ساتھ کانکے تھانہ پہنچی اورایف آئی آردرج کرائی۔
رانچی کے کانکے تھانہ علاقے میں نازنین پروین نامی خاتون کا الزام ہے کہ اس کے شوہر سجاد نے بڑے ہی بے رحمانہ طریقے سے اس کی پٹائی کی۔ بغیر کسی وجہ اور قصور کے رات بھر ا س کو پیٹا۔ اس کے بعد اس کا دل نہیں بھرا تو ہتھوڑا مار کر اس کا ہاتھ توڑ دیا اور ساتھ ہی تین طلاق دے دیا۔
نازنین نے بتایاکہ کچھ مہینے سے سجاد کسی لڑکی سے فون پربات کرتاتھا۔ اس سے شادی کرنے کی بات کہتاتھا۔ پہلے تونازنین نے اسے مذاق سمجھا، لیکن جب سجاد گھنٹوں فون پربات کرنے لگاتواس نے اس کی مخالفت کی۔ پیرکوبھی نازنین نے اعتراض کیاتھا۔اس سے سجاد بھڑگ گیا اورایک ساتھ تین تلاق کہہ دیا۔ نازنین نے اسے سنجیدگی سے نہیں لیا۔ رات میں جب وہ سجاد سے بات کرنے گئی تواس نے صاف کہہ دیا کہ وہ طلاق دے چکاہے۔ اس کارشتہ ختم ہوگیاہے۔نازنین کی مخالفت کرنے اس کی پٹائی شروع کردی۔چہرے اورپیٹھ پرکافی چوٹیں آئی ہیں۔ منگل رات رمس میں اس کا پلاسٹر ہوا۔
دوسری طرف سجاد کاکہناہے کہ میں نے اپنی بیوی کوطلاق نہیں دیاہے۔ وہ منگھڑت باتیں بنارہی ہیں۔بیوی میرے کردارپرشک کرتی ہے۔ اسی بات کولیکرہم دونوں میں مارپیٹ ہوئی تھی۔مجھے بھی چوٹیں آئی ہیں۔میں نے اسے تھپڑ ماراتھا، لیکن اس سے الگ نہیں رہنا چاہتا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *