تمل ناڈو: حراست میں لئے گئے یوگیندریادو،پولس پرمارپیٹ کا الزام

yogendra-yadav
سوراج انڈیا پارٹی کے لیڈر یوگیندیادو کوتمل ناڈو میں حراست میں لیاگیاہے۔ پولس نے ان کواس وقت حراست میں لیا جب وہ 8لین ایکسپریس وے اسکیم کے خلاف کسانوں کے مظاہرے میں حصہ لینے جارہے تھے۔یوگیندریادو نے ٹویٹ کرکے بتایاکہ جب وہ کسانو ں سے ملنے جارہے تھے ان کو پولس نے روکا اورہاتھاپائی کی۔ انہوں نے بتایاکہ تمل ناڈوپولس نے چینگام تھانے میں حراست میں رکھاہے۔ہم یہاں اس پروجیکٹ کی مخالفت کیلئے بلانے پرآئے تھے۔ہمیں کسانوں سے ملنے سے روکا گیا، ہمارے فون چھین لئے گئے۔ ہاتھاپائی کی گئی اورپولس کی گاڑی میں بٹھالیاگیا۔تمل ناڈومیں یہ پولس کے ساتھ پہلاتجربہ تھا۔
موصولہ اطلاعات کے مطابق ، یوگیندیادوکوتمل ناڈو کے ترونم ملائی میں پولس نے تب حراست میں لیا جب وہ کسانوں کے ساتھ مل کرسلیم ضلع اورچنئی کے بیچ 8لین کے ایکسپریس وے کی مخالفت کررہے تھے۔فی الحال ان کوحراست میں لیکر میرج ہال میں رکھاگیاہے۔ ترونم لائی کے ایس پی موقع پرموجودہیں۔ حراست میں لئے جانے کے بعد یوگیندیادونے کہاکہ وہ یہاں کسانوں سے بات کرنے کیلئے آئے تھے۔
یوگیندریادوکے مطابق، وہ جانناچاہتے تھے کہ کیاسچ میں کسان ایکسپریس وے کیلئے اپنی زمین دینے کوتیارہیں۔انہوں نے کہاکہ جب ہم ایک گاؤں سے دوسرے گاؤ ں جارہے تھے توپولس نے ہمیں روک لیا۔یادونے الزام لگایاہے کہ پولس نے اس دوران فون بھی چھین لیا۔ پولس نے ان کے ساتھ ہاتھاپائی کی۔ ہمیں بتایاگیاکہ ہم کسانوں سے نہیں مل سکتے ۔یادوکے مطابق، ہم صرف کسانوں سے ملنے ان کے گھرجارہے تھے۔ہمیں ایساکرنے سے کیسے روکا جاسکتاہے۔یہ تمل ناڈوپولس کاراج ہے۔یادونے کہاکہ ترونم ملائی کے پولس نے مجھے کہاکہ میری موجودگی سے قانون وانتظام بگڑسکتاہے،ماحول خراب ہوسکتاہے اسلئے مجھے حراست میں لیاگیا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *