فلپائن صدر کا شرمناک بیان ،کہا’’جہاں خوبصورت خواتین ہوں گی ، ریپ ہوتا رہے گا‘‘ 

Rodrigo-Duterte
فلپائن کے صدر روڈریکو دوتیرتے اپنے متنازعہ بیانوں کی وجہ سیہمیشہ سرخیوں میں رہتے ہیں،لیکن خواتین کولیکر کئی موقعوں پر انہو ں نے ایسے تبصرے کئے ہیں ،جونہ صرف متنازعہ ہے،بلکہ شرمناک ہے۔فلپائن کے صدر روڈریکو دوتیرتے نے ایک بارپھر خواتین کولیکر شرمناک بیان دیاہے۔ انہوں نے عصمت دری کے بڑھتے واقعات کیلئے’’خوبصورت خواتین ‘‘کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔روڈریکو دوتیرتے کے مطابق ان کے شہر میں ریپ کے واقعات بڑھ رہے ہیں کیونکہ وہاں کافی زیادہ تعداد میں خوبصورت خواتین ہیں۔ انہوں نے کہا ، جب تک شہر زیادہ خوبصورت خواتین رہیں گی تب تک ریپ کے واقعات ہوتے رہیں گے۔
دوتیرتے کا یہ بیان ان کے ہوم اسٹیٹ میں سب سے زیادہ ریپ کے معاملے کی رپورٹ پرآیا۔ فلپائن پولس کا کہنا ہے کہ اسٹیٹ میں 2018کی دوسری سہ ماہی میں ریپ کے سب سے زیادہ معاملے سامنے آئے ہیں۔ جب فلپائن صدرکے سامنے اس کا حوالہ دیاگیا توانہو ں نے اسے لیکر عجیب تبصرہ کیا۔
سی این این کی رپورٹ کے مطابق، دوتیرتے نے شہرمیں ریپ کے سب سے زیادہ معاملے پرتبصرہ کرتے ہوئے اس کا بیہودہ مذاق بنادیا۔ انہو ں نے کہاکہ’ لوگ کہتے ہیں اسٹیٹ میں بہت زیادہ ریپ ہوتاہے۔ اگرکہیں پربہت زیادہ خوبصورت خواتین ہوں گی تووہاں ریپ زیادہ ہوں گے۔
بہرکیف دوتیرتے نے ایک مرتبہ پھر خواتین کو لیکر قابل اعتراض بیان دیا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق،فلپائن کی خواتین تنظیم نے صدر روڈریکو دوتیرتیکے اس بیان کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے۔خواتین تنظیم نے کہا کہ ہم ایسے گندے بیان قبول نہیں کریں گے۔ خاص کر ملک کے صدر کو ایسے بیان نہیں دینا چاہئے۔
خواتین پر صدر روڈریکو دوتیرتے ہمیشہ اس طرح کے بیان دیتے رہتے ہیں۔ اس سال جون میں ساؤتھ کوریا میں روڈریکو دوتیرتے نے منچ پر فلپائن کی ایک خاتون کے لبوں پر کس کر لیا تھا۔اس سے پہلے صدر روڈریکو دوتیرتے یہ بھی کہہ چکے ہیں کہ فوجیوں کو تین خواتین سے ریپ کرنے کی اجازت ہے۔ وہ کسی بھی گھر کی تلاشی لے سکتے ہیں اور کسی کو بھی گرفتار کر سکتے ہیں۔ ان کو پوری چھوٹ ہے۔ اگر مارشل لا کے دوران آپ تین خواتین کا ریپ کردیتے ہیں میں آپ کیلئے جیل چلا جاؤں گا۔اس سے پہلے فروری میں فلپائن صدر نے خواتین کولیکر ایک اورشرمناک تبصرہ کیاتھا، جب انہوں نے خواتین کمیونسٹ باغیوں کوان کے پرائیویٹ پارٹ میں گولی مارنے کی بات کہی تھی۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *