مودی حکومت نے تین طلاق آرڈیننس کو دی منظوری

Triple-talaq
مسلم خواتین کوتین طلاق سے آزادی دلانے کیلئے مودی سرکار نے بڑا فیصلہ کیاہے۔آج ہوئی کابینہ کی میٹنگ میں تین طلاق پرآرڈیننس کومنظوری دے دی گئی ہے۔پی ایم مودی کی کابینہ نے بدھ کوتین طلاق(انسٹنٹ ٹرپل طلاق) پرآرڈیننس کومنظوری دے دی ہے۔مودی کابینہ نے بھلے ہی آرڈیننس پاس کر دیا ہے لیکن اسے پارلیمنٹ میں پاس کرانا حکومت کے لئے ضروری ہو گا۔
بدھ کو مرکزی کابینہ کی میٹنگ میں تین طلاق کو قابل سزا جرم بنانے والے آرڈیننس کو منظوری دی گئی۔ صدرجمہوریہ کی مہرلگتے ہی تین طلاق پرقانون پاس ہوجائیگا ۔پارلیمنٹ سے بل منظورہونے سے پہلے 6مہینے تک آرڈیننس سے کام چلے گا۔یعنی یہ آرڈیننس 6 ماہ تک لاگو رہے گا۔ اس دوران حکومت کو اسے پارلیمنٹ سے پاس کرانا ہو گا۔ حکومت کو پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس میں ہی اسے پاس کرانا ہو گا۔یا درہے کہ تین طلاق بل لوک سبھا سے منظورہوچکاہے، لیکن راجیہ سبھا میں زیرالتواہے۔
آپ کوبتادیں کہ گذشتہ مہینے مودی کابینہ نے اس بل میں کچھ ترمیم کئے تھے، جس میں ضمانت دینے کا اختیارمجسٹریٹ کے پاس ہوگااورکورٹ کی اجازت سے سمجھوتے کی تجویزبھی ہوگی۔اب اس آرڈیننس کومنظوری کیلئے صدرجمہوریہ کے پاس بھیجاجائے گا۔

 

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *