ایشیاکرکٹ کپ 2018:ہندوستان ساتویں مرتبہ بناچمپئن

asia-cup-2018
ہندوستان نے ایشیاکپ 2018کے فائنل میچ میں 28ستمبرکو بنگلہ دیش کو3وکٹ سے ہراکر خطاب اپنے نام کرلیا۔خاص بات یہ ہے کہ ایک دلچسپ میچ میں ٹیم انڈیا نے آخری گیند پر بنگلہ دیش کو شکست دی ۔بہرکیف ساتھ ہی ساتھ ہندوستان نے ایشیا کپ کاساتویں مرتبہ چمپئن بھی بن گیا ہے۔ بنگلہ دیش کی ٹیم پہلے بلے بازی کرتے48.3 اوورس میں 222 بناکر آل آوٹ ہوگئی اور ٹیم انڈیا کو جیت کیلئے 223 رنوں کا ہدف ملا ۔ جس کو ٹیم انڈیا نے 50 ویں اوور کی آخری گیند پر سات وکٹ کھوکرہدف حاصل کرلیا۔
ٹیم انڈیا کی جانب سے روہت شرما نے سب سے زیادہ 48 رن بنائے۔ اس کے علاوہ شیکھر دھون نے 15 ، رائیڈو نے دو ، کارتک نے 37 ، دھونی نے 36 ، کیدار جادھو نے 23 ( ناٹ آوٹ ) ، جڈیجہ نے 23 ، بھونیشور نے 21 اور کلدیپ یادو نے پانچ رن بنائے۔
اس سے قبل ٹاس ہار کر پہلے بلے بازی کرنے اتری بنگلہ دیش کی ٹیم نے اچھی شروعات کی ، مگر اس کے بعد لگاتار اس کے وکٹ گرتے رہے۔ بنگلہ دیش کی طرف سے لٹن داس نے شاندار 121 رنوں کی اننگز کھیلی۔ اس کے علاوہ سومیہ سرکار نے 33 اور مہدی حسن نے 32 رن بنائے۔ ان تینوں کے علاوہ بنگلہ دیش کا کوئی بھی کھلاڑی دہائی کے اعداد و شمار تک نہیں پہنچ سکا۔ بنگلہ دیش کے 222 رن میں اکیلے 121 رن کی شراکت لٹن کی رہی جنہوں نے کسی بنگلہ دیشی بلے باز کا ہندوستان کے خلاف سب سے زیادہ اسکور ہے۔لٹن نے 117 گیندوں پر 121 رن میں 12 چوکے اور دو چھکے لگائے۔
بنگلہ دیش کی طرف سے مستفیض اور روبیل نے 2-2 جبکہ نجم الاسلام ، مشرف مرتضی اور محمود اللہ نے 1-1 کھلاڑیوں کو آوٹ کیا۔ہندوستان کی طرف سے کلدیپ یادو نے3 ، کیدار جادھو نے دو بمراہ اور چہل نے ایک ایک کھلاڑی کو آوٹ کیا۔ جبکہ تین کھلاڑی رن آوٹ ہوئے۔ خیال رہے کہ ہندستان نے اس ٹورنامنٹ کو ساتویں مرتبہ جیتا ہے۔ ہندوستان نے اس سے پہلے1984، 1988، 1990-91، 1995، 2010 میں 50 اوور کی شکل میں اور 2016 میں ٹوئنٹی ۔20 شکل میں جیتاتھا۔وہیں بنگلہ دیش تیسری بار بھی فائنل میں پہنچ کر خطاب سے محروم رہ گیا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *