امریکہ میں فلورنس طوفان سے بڑے پیمانے پر تباہی،لاکھوں مکانات بجلی سے محروم

toofan
سمندری طوفان ’فلورنس‘ نے امریکہ کے مشرقی ساحل پر بڑے پیمانے پر تباہی پھیلا دی ہے اور اب تک اس کے ہاتھوں پانچ افراد ہلاک ہیں، جب کہ لاکھوں مکانات بجلی سے محروم ہو گئے ہیں۔امریکہ کے نارتھ کیرولینا میں طوفان ’فلورنس‘ کے جمعہ کو سمندر سے ٹکرانے کے بعد ہو نے والی شدید بارش اور تیز ہواؤں کی وجہ سے کافی تباہی ہوئی ہے۔ فلورنس طوفان کی وجہ سے اب تک 4 افراد ہلاک جبکہ کئی عمارتیں اور گھر تباہ ہوگئے۔ 7لاکھ22ہزار گھروں کی بجلی کاٹ دی گئی اورمعمولات زندگی بری طرح متاثرہوئی ہے۔طوفان کا مرکز شمالی کیرولینا کا رائٹس وال ساحل تھا جہاں ہوا کی رفتار 150 کلومیٹر فی گھنٹہ تھی۔
طوفان کی شدت کم ہو گئی ہے لیکن ماہرینِ موسمیات کے مطابق اس کی ہلاکت خیز قوت اب بھی برقرار ہے۔طوفان کو زائل ہونے میں ابھی کئی دن لگ سکتے ہیں اور اس دوران 110 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے ہوائیں چلنے کا خدشہ ہے۔اب تک اس کے راستے میں آنے والے علاقے میں سے 17 لاکھ لوگوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کر دیا گیا ہے۔
سمندری طوفان کے باعث کئی عمارتیں تباہ ہو گئی ہیں جبکہ اس کی وجہ سے بڑے علاقے میں طوفانی ہواؤں، موسلادھار بارشوں اور خطرناک سیلابوں کا خدشہ درپیش ہے۔شمالی کیرولائنا میں ایک مکان پر درخت گرنے سے ماں اور بچہ ہلاک ہو گئے ہیں جبکہ اس بچے کے والد کو زخمی حالت میں ہسپتال پہنچایا گیا ہے۔اسی طرح ایک ہوٹل کی گرتی ہوئی عمارت سے درجنوں افراد کو نکال لیا گیا۔
حکام کی جانب سے مذکورہ علاقے کو خالی کرنے کا انتباہ جاری کیا جاچکا ہے، جہاں 17 لاکھ افراد رہائش پذیر ہیں۔ شمالی کیرولینا کے گورنر رائے کوپر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ طوفان سے سارا علاقہ ختم ہوسکتا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ یہ ایک ایسی ناگہانی آفت ہے جو آسانی سے نہیں ختم ہوگی۔محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ شمالی کیرولینا میں 2 سے 3 دن کے دوران شدید بارشیں ہوں گی۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *