طالبات نے معدوم ہوتی چڑیوں کی نسل کے تحفظ کیلئے چھوٹے چھوٹے باکس لگائے

BSJ-Hall
علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کے بیگم سلطان جہاں ہال کی طالبات نے معدوم ہوتی چڑیوں کی نسل کے تحفظ کی سمت میں ایک نئی مثال پیش کرتے ہوئے ہال کیمپس میں مختلف مقامات پر گوریّوں کے قیام کے لئے چھوٹے چھوٹے باکس لگائے ہیں جن کا مقصد ان گوریّوں کو ایک محفوظ ماحول تفویض کرنا ہے۔اس موقع پر ہال کی پرووسٹ پروفیسر اسما علی، وارڈن ڈاکٹر تبسم چودھری، ڈاکٹر نکہت رشید اور ڈاکٹر جمال احمد نے سماجی تنظیم’’ پیس گونگ‘‘ کی اراکین کے ساتھ’’ ہم کسی کو نقصان نہ پہنچائیں‘‘ موضوع پر منحصر مہم میں حصہ لیا۔
پروفیسر اسما علی نے طالبات سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جدید فنِ تعمیر نے گھونسلے بنانے کے لئے جگہ نہیں چھوڑی ہے جن میں پہلے گوریّا اور دیگر پرندے اپنے آشیانے بنایا کرتے تھے۔ اے ایم یو میں قانون کی طالبہ وپیس گونگ کی کو آرڈینیٹر ایس صبا نے کہا کہ گوریّوں کے تحفظ کے لئے سماج کو آگے آنا چاہئے اور ان کے آشیانے بنانے کے لئے انہیں جگہ مہیا کراکر ان سے تعاون کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ اے ایم یو کیمپس کے علاوہ شہر کے دیگر مقامات پر بھی اس قسم کے باکسس لگائے جائیں گے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *