گھر میں گھس کر 4 لوگوں نے کی خاتون کی اجتماعی عصمت دری،پھرلٹکایاپھندے پر

rape
ہریانہ کے کیتھل ضلع بالوگاؤں میں چارلوگوں کے ذریعہ ایک شادی شدہ خاتون کے گھرمیں گھس کراس سے مبینہ طورپراجتماعی عصمت دری کا معاملہ سامنے آیاہے۔پولس نے بتایاکہ یہ واقعہ 4اگست کوپیش آیاہے۔ملزمین خاتون کے گھرمیں گھس گئے ،اس وقت کا اس کا شوہرگھرپرنہیں تھا۔پولس کے مطابق، خاتون اپنے بچوں کے ساتھ سورہی تھی اورچارلوگوں نے اس گھرمیں گھس کرمبینہ طورپر اس کے ساتھ اجتماعی عصمت دری کی اورپھراسے پھندے سے لٹکادیا لیکن خاتون کی جان بچ گئی۔
تفصیلات کے مطابق،ہریانہ کے کیتھل ضلع کے کلایت علاقے کے ایک گاؤں میں ایک کنبہ اپنے کھیت میں مکان بنا کر رہ رہا تھا۔ شوہر کسی دوسرے رشتہ دار کو دوا دلانے کے لئے دوسرے شہر گیا ہوا تھا۔ رات کو عورت اپنے دو بچوں کے ساتھ اپنے گھر میں سو رہی تھی، تبھی 11 بجے کے قریب عورت نے کسی کے گھر میں داخل ہونے کی آواز سنی۔ جب عورت باہر آئی تو دیکھا کہ چار جوان اس کے گھر میں گھس چکے تھے۔ عورت نے شور مچایا لیکن مکان کھیت میں ہونے کی وجہ سے کوئی عورت کی آواز کو سن نہیں سکا۔
ان چار درندوں نے سو رہے بچوں کو پہلے کمرہ میں بند کر دیا اور پھر عورت کو ایک دوسرے کمرے میں لے گئے اور اس کی اجتماعی عصمت دری کی۔ عصمت دری کے بعد چاروں ملزمان عورت کو پھندے میں لٹکا کر فرار ہو گئے۔ لیکن کچھ دیر بعد رسی ڈھیلی پڑ گئی اور متاثرہ کے پیر زمین پر لگ گئے جس کی وجہ سے اس کی جان بچ گئی۔
متاثرہ عورت نے اس کے بعد اپنے شوہر کو فون کیا اور اپنی آپ بیتی سنائی۔ خاتون کا کنبہ وہاں پہنچا اور پھر اسے اسپتال لے گیا۔ فی الحال، خاتون کا علاج اسپتال میں چل رہا ہے۔ وہیں، اطلاع ملنے پر کیتھل ایس پی آستھا مودی جائے حادثہ پر پہنچیں اور متاثرہ کے گھر کا جائزہ لیا۔ متاثرہ کے بیان پر پولیس نے چاروں ملزمان کے خلاف معاملہ درج کر لیا ہے اور جانچ شروع کر دی ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *