امریکی سینیٹر جان میک کین نہیں رہے

john-mccain
امریکی سیاست دان اور سابق صدارتی امیدوار سینیٹر جان میک کین 81 برس کی عمر میں انتقال کر گئے ہیں۔خبروں کے مطابق، امریکی سنیٹرجان میک کین کا دماغ کے کینسرکے باعث انتقال ہوگیا۔انہو ں نے25اگست کوشام 4بج کر 28منٹ پر آخری سانس لی۔ان کے دفتر کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق میک کین کا انتقال سنیچر کو ہوا اور اس وقت ان کے خاندان کے افراد ان کے ہمراہ تھے۔
امریکہ کے سابق صدر براک اوباما نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہاکہ ’ہم سبھی ان کے قرض دارہیں‘۔میک کین 2008کے صدارتی انتخاب میں اوباما سے ہارگئے تھے۔امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے کہاکہ میک کین کیلئے ان کے دل میں بہت احترام ہے۔ میک کین کوجنگ کی ہیروکے طورپرجانا جاتاہے۔
ان کے دماغ میں جولائی 2017 میں رسولی کی تشخیص ہوئی تھی اور اس کے بعد سے وہ علاج کروا رہے تھے۔
میک کین کی بیٹی میگن نے کہا کہ اب ان کی زندگی کا مقصد اپنے والد کی ‘مثال بن کر، ان کی توقعات پر پورا اترنا اور محبت کے ساتھ جینا ہے۔’
انھوں ٹوئٹر پر ایک بیان میں کہا: ‘آنے والے برس میرے والد کے بغیر ویسے نہیں ہوں گے، لیکن وہ پھر بھی اچھے دن ہوں گے، زندگی اور محبت سے بھرے، کیوں کہ ان کا نمونہ میرے والد کی زندگی ہو گی۔’
میک کین 6بار سینیٹر رہے اور رپبلکن پارٹی کی طرف سے 2008 میں براک اوباما کے مقابلے پر صدارتی انتخاب لڑا لیکن ناکام ہو گئے۔میک کے والد اور دادا دونوں نیوی میں ایڈمرل رہے ہیں۔ خود میک کین ویت نام جنگ میں فائٹر پائلٹ رہے ہیں۔ اس دوران ان کا جہاز مار گرایا گیا اور وہ پانچ سال تک ویت نام کی قید میں رہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *