ہار کر جیتنے والے کو بازیگر کہتے ہیں

پورنیہ کے ہونہار بیٹے اجمل خورشید نے بی پی ایس سی میں شاندار کامیابی حاصل کرکے پورنیہ کا نام روشن کیا، جس سے پورے علاقے میں  خوشی کی لہر دوڑگئی ہے۔ محمد اجمل خورشید کا تعلق پورنیہ ضلع کے امور بلاک بنگاواں گائوں سے ہے۔ ویسے تویہ بلاک اور گائوں کے اعتبار سے بہت ہی خستہ حال گائوں ہے جہاں کسی طرح کی کوئی سہولت میسر نہیں ہے۔ بجلی اور سڑک جیسی ضروری چیز یہاں میسر نہیں ہے۔ ایسے غریب اور پسماندہ گائوں سے تعلق رکھنے والے محمد اجمل خورشید نے ایس ڈی ایم بن کر نہ صرف اپنے گھر خاندان اور علاقے کا بلکہ پورے ضلع کانام روشن کیا ہے۔ ان کی کامیابی سے پورے علاقے کے لوگوں کا سر فخر سے اونچا ہوگیا ہے۔ پورے علاقے میں خوشی کا ماحول ہے۔ محمد اجمل خورشید کے ایس ڈی ایم بننے سے یقینی طور پر نئی نسل میں جوش و جذبہ پیدا ہوگا،نئے طالب علموں اور بچوں کے وہ آئیڈیل بن جائیںگے۔
محمد اجمل خورشید نے 1996میں میٹرک روٹا ہائی اسکول سے پاس کیا اور 11ویں اور 12ویں کی تعلیم ڈی ایس کالج کٹیہار سے پائی۔ آگے کی پڑھائی کے لیے پٹنہ چلے گئے اور وہاں مگدھ یونیورسٹی سے بی اے اور ایم اے کی پڑھائی مکمل کی۔ محمد اجمل خورشید زمانہ طالب علمی میں ایک مثالی طالب علم رہے۔ پڑھائی کے معاملے میں وہ کسی چیز سے سمجھوتہ نہیں کرتے تھے اور جس چیز کو حاصل کرنے کے لیے وہ ٹھان لیتے تھے،اسے حاصل کرکے ہی دم لیتے تھے۔ میںان کو بچپن سے ہی جانتا ہوں۔ انہوںنے بی پی ایس سی میں کامیابی پانے کو اپنی زندگی کا مقصد بنا لیاتھا۔ اس کے لیے انہوں نے بہت محنت کی۔ دوبار اس امتحان میں فیل بھی ہوئے لیکن ان کا حوصلہ پست نہیں ہوا اور نہ ہی ان کے قدم ڈگمگائے ۔ بالآخر وہ اس بار منزل مقصود پاگئے۔ مبارک ہو بھائی ۔ہار کر جیتے والے کو بازی گر کہتے ہیں۔

 

 

اردو کی مشہورمصنفہ عصمت چغتائی کو گوگل انڈیانے ڈوڈل بناکریادکیا

 

محمد اجمل خورشید کے والد مدرسہ بورڈ کے استاد تھے، جو اب ریٹائرڈ ہوچکے ہیں۔ والد محترم نہایت شریف اور صوم و صلوٰۃ کے پابند ہیں، جو اس سال حج پر گئے ہوئے ہیں۔ محمد اجمل خورشید مجموعی طور پر پانچ بھائی اور چار بہنیں ہیں۔ محمداجمل خورشید بھائیوں میں سب سے بڑے ہیں۔ ان سے چھوٹے بھائی اکمل خورشید داروغہ صاحب ہیں، ان سے چھوٹے بھائی ایم بی بی ایس فائنل میں ہیں۔
محمد اجمل خورشید کی کامیابی کو لے ان کے سبھی رشتہ داروں میں خوشی کی لہر دوڑ ر ہی ہے۔ خاص طور سے ننیہال اورخالہ زاد بھائی خوشی سے پھولے نہیں سمارے ہیں۔خالہ زاد بھائی ان کو دل سے مبارکباد پیش کرتے ہیں، خاص طورپر خلیرے بھائیوں میں سب سے بڑے بھائی سرپنچ ذکی احمد اور رضی احمد کی طرف سے بہت بہت مبارکباد ۔ بڑے اور چھوٹے ماموں ماسٹرحسن صاحب اور ماسٹر اخلاق صاحب دعا دیتے ہوئے کہتے ہیں بیٹا! خوب ترقی کرو اور پھولو پھلو۔

رضی احمد

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *