10واں بچہ پیداکرنے سے منع کرنا بیوی کوپڑامہنگا،شوہرنے گھرسے نکالا

demo-pic
اترپردیش کے ہاپوڑ میں بچہ پیداکرنے کولیکرعجیب وغریب معاملہ سامنے آیاہے۔بچے پیدکرنا کوئی بری بات نہیں بلکہ بہت ہی اچھی بات ہے۔دنیامیں ہرشوہراوربیوی چاہتا کہ اس کے بچے ہوں ۔لیکن بچے پیداکرنے کے ساتھ وہ یہ بھی چاہتاہے کہ بچے کی بہترپرورش ہو،اوربچوں کوزیورتعلیم سے آراستہ کیا جائے ۔محض بچہ ہی پیداکرنا کمال کی بات نہیں ہے بلکہ بچوں کوصاف ستھرا رکھے، بہترپرورش وپرداخت کرے اوربہترتعلیم دے۔
بہرکیف اترپردیش کے ہاپوڑ میں انسانیت کے ساتھ شوہربیوی کے رشتہ کوبھی شرمسارکرنے والامعاملہ سامنے آیاہے۔ یہاں پر شادی کے 25میں 9بچے پیداہونے کے بعد 10واں بچہ پیدا کرنے سے منع کرنے پرشوہرنے خاتون کوپیٹ کر گھر سے نکال دیا۔45سالہ خاتون نے پولس کوتحریردیکر شوہرپرکارروائی کی مانگ کی ہے۔
ویب پورٹل جاگرن کے مطابق،گاؤں پپڈیلا رہائشی ایک شادی شدہ خاتون نے بتایاکہ اس کے 9بچے ہیں، جن کی دیکھ بھال کرنے میں اسے بہت پریشانی ہوتی ہے۔بیوی نے الزام لگایاہے کہ اب اس کا شوہر 10واں بچہ پیدا کرنا چاہتاہے، جس سے وہ پریشان ہے کہ 10واں بچہ پیداکرنا اس کے صحت کیلئے نقصاندہ ہوگا۔ ساتھ ہی بچوں کا مستقبل بھی خطرے میں ہوگا ۔لیکن اس کا شوہراس بات کونہیں مان رہاہے۔
بیوی نے کہاکہ وہ اس بات کوچوتھا بچہ پیداکرنے کے بعد سے ہی کہتی آرہی ہے، لیکن اس کے شوہرکے سامنے اس کی ایک نہ چلی اور9بچے ہوگئے۔ اس نے بتایاکہ جب میں نے اس بار مخالفت کی تواس نے اس کے ساتھ مارپیٹ کرکے گھر سے نکال دیاہے، جس کے باعث وہ کافی دنوں سے اپنے مائکے غازی آبادمیں رہ رہی تھی۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *