روہتک:گروکل کے 6 بچوں کے ساتھ بدفعلی،سینئرطلبا پرالزام

Gurukul
ہریانہ کے روہتک سے ایک چونکانے والا معاملہ سامنے آیاہے۔دراصل روہتک میں ایک گروکل میں بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی(بدفعلی)کا انکشاف ہواہے۔گروکل کے 6بچوں نے جنسی زیادتی کی بات اپنے خاندان والوں کو رو-روکر بتائی ہے۔روہتک سے 8کلومیٹر دور ی پرواقع بھیاپور لاڑھوت کے گروکل میں سینئرطلبا پرہی جنسی زیادتی (بدفعلی) کا الزام ہے۔دراصل رکشا بندھن تہوار پر گروکل میں پڑھنے والے بچوں کے والدین ان سے ملنے کے لئے گروکل پہنچے تھے۔ جب والدین بچوں سے ملے تو وہ رونے لگے اور 6 بچوں نے ان کے سامنے روتے روتے بتایا کہ گزشتہ ایک سال سے ان کے ساتھ گروکل میں جنسی استحصال ہو رہا ہے اور کسی کو بتانے پر جان سے مارنے کی دھمکی مل رہی ہے، اب وہ کسی بھی قیمت پر گروکل میں نہیں رہیں گے۔

بہرکیف متاثرہ بچوں نے کنبہ کے سامنے گروکل میں رہنے سے انکار کر دیا۔ معاملہ کے انکشاف پر انتظامیہ میں ہلچل مچ گئی اور صدر پولیس موقع پر پہنچ گئی اور بچوں کے بیانات درج کئے اور ان سے پوچھ گچھ کی۔متاثرہ بچوں نے اپنے کنبہ کے سامنے پورے معاملہ کو بے نقاب کرتے ہوئے بتایا کہ گزشتہ ایک سال سے سینئر طلبہ ان کے ساتھ بدفعلی کر رہے تھے۔ بچوں کا کہنا ہے کہ انہوں نے کئی بار اساتذہ اور انتظامیہ سے شکایت کی، لیکن کسی نے کوئی کارروائی نہیں کی۔بہرحال پولیس نے اس معاملہ میں پوکسو ایکٹ کے تحت کارروائی شروع کردی ہے اور متاثرین کی طبی جانچ کی جا رہی ہے۔پولیس نے اس سلسلے میں تحفظ اطفال افسر کو بھی اطلاع دے دی ہے۔ ساتھ ہی پولیس نے بچوں کی طبی جانچ کرائی اور اس سلسلے میں پوکسو ایکٹ کے تحت کارروائی شروع کر دی ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *