پاکستان : طلال چوہدری توہین عدالت کے الزام میں نااہل قرار

talal-chauhadhry
پاکستانی سپریم کورٹ نے امورِ داخلہ کے سابق وزیر مملکت طلال چوہدری کو توہین عدالت کا مرتکب پاتے ہوئے عدالت کے برخاست ہونے تک قید کی سزا سناتے ہوئے پانچ سال کے لیے کسی بھی عوامی عہدے کے لیے نااہل قرار دے دیا ہے۔سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ نے 63 ون جی کے تحت طلال چوہدری کو توہین عدالت کا مرتکب پایا۔جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ عدالت کے برخاست ہونے تک طلال چوہدری کو قید کی سزا دی جاتی ہے جبکہ ان پر ایک لاکھ روپے جرمانہ بھی عائد کیا گیا ہے۔
بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق طلال چوہدری کی سزا 11 بجے بینچ کے برخاست ہونے تک تھی اور اس وقت تک طلال چوہدری کمرہ عدالت میں ہی بیٹھے رہے۔واضح رہے کہ طلال چوہدری نے اس سال جنوری میں صوبہ پنجاب کے شہر فیصل آباد میں حکمراں جماعت کے قائد میاں نواز شریف کو ایک عوامی جلسے میں مخاطب کرتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان کی اعلی عدلیہ میں فوجی آمر کے عبوری آئینی حکم نامے پر حلف لینے والے ‘بت’ بیٹھے ہوئے ہیں، ان کو باہر نکالا جائے ورنہ یہ اسی طرح ناانصافیاں کرتے رہیں گے۔سپریم کورٹ نے 11 جولائی کو طلال چوہدری کے مقدمے کا فیصلہ محفوظ کیا تھا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *