محبت کی شادی کےباعث لڑکی اورلڑکے کے ساتھ دردنگی

married-couple
مدھیہ پردیش کے آدیواسی اکثریتی ضلع علی راجپورمیں ایک درندگی کاسنسنی خیزمعاملہ سامنے آیا ہے۔دراصل ،یہاں ایک شادی شدہ جوڑے کو مبینہ طورپر پیش پلایاگیا، انہیں کھمبے سے باندھ کر پیٹا گیا۔یہ سب محض اسلئے ہواکیونکہ انہو ں نے اپنی مرضی سے شادی کی تھی۔یہ معاملہ مدھیہ پردیش کے ضلع علی راجپور سے محض 25کلومیٹردور ہرداس پورگاؤں کا ہے۔ جہاں ایک خاندان نے اپنی لڑکی کی محبت کی شادی سے ناراض ہوکر لڑکی اورعاشق کونہ صرف کھمبے سے باندھ کر پیٹا بلکہ پیشاب بھی پلایا۔
بتایا جارہا ہے کہ یہ محبت کی شادی آدیواسی رسم ورواج کے مطابق ہوئی تھی۔متاثرہ کے مطابق، برادری پنچایت کے فیصلے کے مطابق انہوں لڑکے والوں نے لڑکی فریق کو 70 ہزارروپئے نقداوردو بکرے بھی دیئے اورگھروالوں نے پنچایت کے سامنے شادی کی رضامندی دے دی۔
آمبوا تھانہ کے انچارج وکاس کپیس نے تبایاکہ اس معاملے میں دولوگوں کوگرفتار کرلیاہے۔اپنی شکایت میں متاثرہ نے بتایاکہ ہرداس پورگاؤں میں تقریباً ڈھائی مہینے پہلے سرپنچ کی 21سال کی بیٹی نے گاؤں کے ہی رمیش بھلالا سے شادی کرلی تھی۔مقامی آدیسواسی رواج کے مطابق، معاملے کولیکر پنچایت ہوئی اوراس میں صلح ہوگئی۔اس کے بعد جوڑے مزدوری کرکے گزرکرتاتھا۔ تھانہ انچارج کے مطابق، 24جولائی کوتہوارمنانے کیلئے جوڑے گھرلوٹا تھا۔ دونوں چچا گھرپرتھے۔ 25جولائی کوصبح تقریباً چار بجے لڑکی کے والد اپنے دوبھائیوں اورتین اہل خانہ کے ساتھ ان کے گھرمیں گھس گئے۔یہ زبردستی لڑکے اورلڑکی اورگھرسے باہرلے گئے اوران کی پٹائی کی۔اپنی لڑکی کی محبت کی شادی سے ناراض ہوکرگھر والوں نے لڑکی اوراس کے عاشق کو درد ناک سزا دی۔ لڑکی کے گھروالوں نے اپنی ہی بیٹی کی ساڑی اتاری اوراسے پیٹا۔
درندگی کی انتہا یہیں نہیں رکی، اس لڑکی کے بال کاٹ کراسے پیشاب پلایا گیا۔ اس دوران اس کے محبوب کی پٹائی کرکے اسے ایک کھمبے سے باندھ دیا گیا اوراسے پیشاب بھی پلایا گیا۔ معاملے کا انکشاف تب ہوا جب سوشل میڈیا پراس کا ویڈیووائرل ہوگیا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *