ہرسماج کے لوگوں کومذہبی آزادی ملے:مولانامنتظر قاسمی

mahadul-uloom
دنیائے فانی میں ہرانسان آزادی چاہتاہے۔ ان کا تعلق کسی بھی شعبے سے کیوں نہ ہو۔ انسان کے بنیادی حقوق میں آزادی کو سب سے زیادہ اہمیت حاصل ہے۔ انسان آزادی کی خاطر ہر طرح کی مشقتیں برداشت کرنے کیلئے ہمہ وقت تیار رہتا ہے۔اسی طرح ہندوستان کوطویل جدوجہدکے بعدآزادی کی نعمت حاصل ہوئی، جس کے لیے ہمارے اسلاف،اکابرعلماء اورمدارس کے اکابرفضلاء نے زبردست قربانیوں کانذرانہ پیش کیا،جان و مال کی قربانیاں دیں، تحریکیں چلائیں تختۂ دار پرچڑھے، پھانسی کے پھندے کوبہادری کے ساتھ بخوشی گلے لگایا، قیدو بندکی صعوبتیں جھلیں اور حصولِ آزادی کی خاطرمیدا ن جنگ میں نکل پڑے، آخر کاانگریزملک سے نکل جانے پرمجبورہوئے۔ ان خیالات کا اظہار مولانا منتظرقاسمی نے یوم آزادی کے موقع پرمدرسہ معہدالعلوم شاہین باغ ،نئی دہلی میں کیا۔
مولانا نے مدرسہ معہدالعلوم میں پرچم کشائی کے بعدطلباو حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ آزادی کامطلب یہ نہیں ہے کہ ایک طاقتورانسان،مال وزرسے لبریزسے شخص ایک کمزورپرظلم وجبرکرے، کسی کمزورانسان سے ناجائزفائدہ اٹھانے کی کوشش کرے ۔مولانا منتظرنے کہاکہ ہندوستان میں بسنے والے ہرسماج کے لوگوں کومذہبی آزادی ہو۔ہمیں مذہبی آزادی ملک کی آئین نے دی ہے۔مولانا نے سوال اٹھاتے ہوئے کہاکہ کیاماب لنچگ آزادی ہے؟ کیاکسی کمزورپرظلم وستم کرنا آزادی ہے؟،کرپشن ورشوت خوری آزادی ہے؟انہو ں نے کہاکہ یہ ہرگزآزادی نہیں، یہ ہرگزآزادی نہیں ہے۔مولانا نے کہاکہ آبادی کے تناسب ہرسماج کے لوگوں کویکساں حقو ق ملے ۔ہرشخص خوف سے آزادہو۔
اس موقع پرمولانا نعیم، حافظ مزمل، مولانا فروغ ، مولانا اشفاق ،مدرسہ کے طلباوجملہ اساتذہ کرام کے علاوہ علاقے کے اہم شخصیات شامل تھیں،نے قومی جھنڈالہراکرخوشی کا اظہارکیا اورطلبانے خوبصورت آوازمیں قومی ترانہ پیش کیا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *