ریسرچ کے معیار کو بلند کرنے کی ضرورت ہے :ڈاکٹر عطاء اللہ صدیقی

dr-ataullah
نئی دہلی:’’اسلام نے تحقیق و تنقید پر خصوصی زور دیا ہے،اس حوالے سے ہمیں ریسرچ کے معیار کو بلند کرنے کی سخت ضرورت ہے تاکہ موجودہ دور میں اسلام کو درپیش چیلنجز کا مقابلہ کیا جاسکے۔‘‘ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر عطاء اللہ صدیقی،دی مارک فیلڈ انسٹی ٹیوٹ آف ہائرایجوکیشن ،یوکے،نے اپنے توسیعی خطبے کے دوران کیا۔اس کا اہتمام آج جامعہ ملیہ اسلامیہ کے شعبہ اسلامک اسٹڈیز نے بعنوان ’’اسلام میں تحقیق:رجحانات اور طریقہ کار میں درپیش چیلنجز‘ ‘کے تحت کیاتھا۔مہمان مقرر نے استشراق اور مستشرقین کے آغاز و ارتقا پر روشنی ڈالتے ہوئے بتایا کہ مستشرقین نے اسلامک اسٹڈیز کے میدان میں اپنی بیش قیمتی تحقیقات پیش کی ہیں،ہمیں ان سے استفادہ کرنا چاہیے۔مہمان خصوصی پروفیسر اشتیاق دانش نے برصغیر میں اسلامک اسٹڈیز کی تاریخ پر گفتگو کرتے ہوئے فرمایا کہ ریسرچ اسکالرس کواپنی تحقیقات کے ذریعے اسلامی تاریخ کے نئے گوشوں کو واضح کرنے کی کوشش کرنی چاہیے۔
پروگرام کی صدارت کرتے ہوئے پروفیسر محمد اسحق،صدر شعبہ اسلامک اسٹڈیز اور ڈائریکٹر، ذاکر حسین انسٹی ٹیوٹ آف اسلامک اسٹڈیز نے توسیعی خطبہ کے عنوان کی وضاحت کرتے ہوئے فرمایا کہ اسلامک اسٹڈیز کا دائرہ بہت وسیع ہے اور اس میدان میں مستشرقین نے اہم خدمات انجام دی ہیں،ریسرچ اسکالرس کو ان کے مثبت اور منفی پہلوؤں پر نظر رکھتے ہوئے استفادہ کرنا چاہیے۔ پروگرام کا آغاز مختار اشرف،ایم اے سال آخر کی تلاوت کلام پاک سے ہوا۔اس پروگرام کے کوآرڈینیٹر جناب جنید حارث نے نظامت کے فرائض انجام دیے اور مہمان مقرر کا تعارف کرایا،نیزرسمی اظہار تشکر بھی ادا کیا۔آخرمیں سوال وجواب بھی کیے گئے۔اس پروگرام میں شعبہ کے جملہ اساتذہ پروفیسر سید شاہد علی،ڈاکٹر مفتی مشتاق،ڈاکٹر محمد ارشد،ڈاکٹر خالد خان ،ڈاکٹر عمر فاروق،ڈاکٹر خورشید آفاق،اسامہ شعیب علیگ ،محمد مسیح اللہ،ڈاکٹر جاویداختر ،محمد تحسین زماں،ریسرچ اسکالرس اور طلبہ وطالبات کی ایک بڑی تعداد موجود تھی۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *