یوپی-بہارمیں قانون کا راج ختم ہوگیاہے:محمداعظم خاں

azam-khan
بہارکے مظفرپور شیلٹرہوم اوراترپردیش کے دیوریا شیلٹر ہوم میں بچیوں کے ساتھ عصمت دری معاملے میں سماج وادی پارٹی کے سینئرلیڈر محمداعظم خان نے بہاراوریوپی سرکاروں کوکٹگھرے میں کھڑاکیا۔انہوں نے کہاکہ قانون بہت کمزورہوگیاہے۔انہو ں نے کہاکہ جوبندوں کا شکرگزارنہیں ہوتے ،وہ اللہ کے شکرگزارنہیں ہوتے ۔جوبندوں کودھوکہ دے سکتے ہیں، وہ اپنے مالک کوبھی دھوکہ دے سکتے ہیں۔محمداعظم خاں نے مذکورہ باتیں گذشتہ روزرامپورمیں کہیں۔اعظم نے کہا کہ بی جے پی کی سرکار میں قانون کمزور ہوا ہے ۔ سپریم کورٹ کا خوف ختم ہو گیا ہے ۔ اتر پردیش میں قتل کرنیو الے ضمانت پر چھوٹتے ہیں تو ان کے اعزاز میں جلوس نکالے جاتے ہیں۔
سماج وادی پارٹی کے سینئر لیڈر اور سابق وزیر اعظم خاں نے کہا کہ اتر پردیش اور بہار میں پاپ کرنے والوں کو چھوٹ مل گئی ہے ۔محمداعظم خاں نے مزیدکہاکہ جنہو ں نے سیاست میں عوام کے ساتھ دھوکہ کیا۔عوام سے کہاکچھ اورکام کچھ کیا۔ووٹ کیلئے فاشزم کے خلاف اورفاسسٹ طاقتوں کے سرکاربنالی۔بہارمیں تواسلئے اس پاپ کی سزاہے۔انہو ں نے کہ اس سے زیادہ پاپ یہ ہے کہ یوپی اوربہارکے وزرائے اعلیٰ نے بھی اپنی کرسی بچائے رکھنے کیلئے پاپ کرنے والوں کوکھلی چھوٹ دے دی۔اعظم خاں نے سوال کیاکہ اناؤ کا ریپ کیس کیاہے؟ آج تک اس کیلئے کوئی سخت کارروائی کیوں نہیں ہوئی؟۔اعظم خاں نے کہاکہ جب سماج کوچلانے والے لوگ سماج کے ساتھ غیراخلاقی کام کریں گے تونتیجے ایسے ہی آئیں گے۔انہو ں نے کہاکہ جب قانون کا راج ختم ہوجائے گا توجوقاتل ضمانت پرچھوٹیں گے ، انکے لئے جلوس نکالیں گے،ان کا خیرمقدم کیاجائے گا۔انہو ں نے کہاکہ قانون کمزورہوگیاہے۔ اسی باعث سپریم کورٹ کوکہنا پڑا کہ لگتاہے کہ لوگوں کے دلوں سے عدالت کا خوف ختم ہوگیاہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *