بی جے پی صدرامیت شاہ کولکاتہ ریلی میں ممتابنرجی پربرسے

amit-shah
کولکاتہ کی ریلی میں بی جے پی صدرامیت شاہ نے ممتابنرجی پرجم کرنشانہ سادھا۔انہو ں نے کہاکہ ممتابنرجی اس لئے این آرسی کی مخالفت کررہی ہیں کیونکہ وہ چاہتی ہیں کہ بنگلہ دیشی دراندازآسام سے نکالے جائیں۔دراندازترنمول کانگریس کا ووٹ بینک ہیں۔امت شاہ نے ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ممتا حکومت میں دراندازی نہیں روکی گئی تو مغربی بنگال سلامت نہیں رہ جائے گا۔ دراندازی روکنے کا آسان طریقہ این آر سی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس، کمیونسٹ پارٹیوں اور ترنمول کانگریس کو مغربی بنگال کے عوام نے موقع دیا لیکن یہ ریاست کی ترقی نہیں کر سکیں۔ مرکز کی طرف سے دئیے گئے ہزاروں کروڑ روپئے کے پیکیج کو بھتیجے اور سنڈیکیٹ کی سرکار نے گاوں کے لوگوں تک پہنچنے نہیں دیا۔
امیت شاہ نے کہاکہ ہماری ریلی کیلئے کئی طرح رکاوٹ ڈالے گئے۔پہلے ریلی کی اجازت نہیں دی گئی۔ بنگلہ ٹی وی کے نشریات کوروکی گئی ۔لیکن میری آوازنہیں رکے گی۔ امیت شاہ نے کہاکہ میں ممتابنرجی کی پارٹی ٹی ایم سی کواکھاڑپھینکنے کیلئے بنگال کے سبھی ضلعوں میں جاؤں گا۔
بی جے پی صدر نے مایو روڈ پر ’ یوا سوابھیمان سماویش‘ریلی کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ریاست میں قانون وانتظام کی صورت حال ختم کر دی گئی ہے۔ یہاں بس مجرموں کا بول بالا ہے۔ جب تک ممتا بنرجی کو بنگال سے بے دخل نہیں کر دیا جاتا تب تک بی جے پی کی 19 ریاستوں میں حکومت بے معنیٰ ہے۔
بہرکیف خبرہے کہ مغربی بنگال کے ہاوڑا میں ترنمول کانگریس (ٹی ایم سی) کے کارکنوں نے امت شاہ کی ریلی کی مخالفت کرتے ہوئے ان کے پتلے پھونکے اور ان کی ریلی کی مخالفت میں نعرے بازی ہوئی۔اس سے قبل آج ہفتے کوامیت شاہ کی ہونے والی ریلی سے ٹھیک پہلے بنگال میں بی جے پی کے خلاف پوسٹربازی شروع ہوگئی ہے۔امیت شاہ کی ریلی سے پہلے جمعہ کوکولکاتہ کی مے یوروڈ پر’بنگال مخالف بی جے پی واپس جاؤ‘ کے پوسٹردیکھنے کوملے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *