آسام شہریت کے حوالے سے شاہی امام احمدبخاری کا بڑابیان

bukhari
نئی دہلی:شاہی امام مولاناسیداحمد بخاری نے کہاہے کہ آسام میں شہریت کے نام پر جوکھیل کھیلاجارہاہے وہ عام انتخابات سے قبل ہندو ووٹر کو ورغلانے ، بنیادی مسائل سے اس کی توجہ ہٹانے، اورحواس پر جذبات کو غالب کرکے 2019 میں ایک بارپھر مرکز میں حکومت بنانے کا ہے۔انہوں نے کہاکہ ہندوستان اس نفر ت آمیز اور گھناؤنی سیاست کو مسترد کرتاہے۔ میں سمجھتاہوں کہ ملک کاہندو اور مسلمان اس منافرت کی آگ میں ایک دوسرے کے ساتھ کھڑے ہیں۔سیاست عوام اور ملک کی ترقی کاذریعہ ہے۔عام معصوم آدمی کو ایک دوسرے کے خلاف صف آراء کرنے کا ہتھیارنہیں۔
امام بخاری نے کہاکہ میں ہندوستانی ضمیر سے اپیل کرتاہوں کہ وہ جاگے اور سماج دشمن قوتوں کو ان کی اوقات بتائیں۔جس راستے پر ملک چل پڑاہے کیا اس راستے سے ہم اقوام متحدہ کی سیکوریٹی کونسل کے رکن بن سکتے ہیں؟کیایہ بقاء باہم کا وصول ہے جس کیلئے ہمارا وطن عزیز جاناجاتاہے ؟ کیا ہم دلوں کو بانٹ کر اپنے مشترکہ اکابرین اورجنگ آزادی کے متوالوں کی قربانیوں کا مذاق اڑانے کے مجرم نہیں بن رہے؟انہوں نے کہاکہ یہ ہندوستان ہے جس پر ہرہندوستانی کوناز ہے ہم اسے داغدار نہیں ہونے دیں گے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *