ایک ہزار ٹیسٹ کھیلنے والا ملک بنا انگلینڈ 

England
ہندوستان اور انگلینڈ کے بیچ کھیلی جانے والی پانچ ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا پہلا میچ یکم اگست کو جیسے ہی برمنگھم میں شروع ہوا، انگلینڈ دنیا ئے کرکٹ میں1000 ٹیسٹ میچ کھیلنے والا دنیا کا پہلا ملک بن گیا۔ 1000 ٹیسٹ میچ کھیلنے کا اعزاز حاصل کرنے میں انگلینڈ کو 141 سال کا وقت لگا۔
عالمی کرکٹ کی تاریخ کا پہلا ٹیسٹ میچ 1877 میں انگلینڈ اور آسٹریلیا کے بیچ کھیلا گیا تھا۔ انگلینڈ اب تک 999 میچ کھیل چکا تھالیکن یکم اگست کو ہندوستان اور انگلینڈ کے مابین پانچ میچوں کی سیریز کا پہلا میچ شروع ہوتے ہی وہ 1000 ٹیسٹ میچ کھیلنے والا دنیا کا پہلا ملک بن گیاجبکہ آسٹریلیا 812 ٹیسٹ میچ کھیل کر دوسرے نمبر پر ہے۔ واضح ہو کہ آسٹریلیا اور انگلینڈ دونوں ہی ٹیمیں تیز کرکٹ کھیلنے والے اس دور میں بھی ٹیسٹ کرکٹ کو زیادہ ترجیح دیتی ہیں۔ انگلینڈ جہاں اوسطاً سالانہ 7 ٹیسٹ میچ کھیلتا ہے ، وہیںآسٹریلیا اوسطاً سالانہ 6ٹیسٹ میچ کھیلتا ہے۔
گزشتہ دس سال میں ان دونوں ملکوں کی ٹیموں نے ٹیسٹ میچ کھیلنے کی اوسط میں اضافہ کیا ہے۔ انگلینڈ نے پچھلے دس سالوں میں124ٹیسٹ میچ کھیلے ہیں گویاانگلینڈ نے گزشتہ دس سالوں میں اوسطاً 12 ٹیسٹ میچ کھیلے ہیں جبکہ آسٹریلیا نے بھی پچھلے دس سالوں میں ٹیسٹ میچ کھیلنے کی اوسط میں اضافہ کیا ہے۔ آسٹریلیا نے پچھلے دس سال میں116 ٹیسٹ میچ کھیلے ہیں یعنی اوسطاً سالانہ 12 میچوں سے کچھ کم ٹیسٹ میچ کھیلے ہیں۔ ۔ انگلینڈ کے 1000 ٹیسٹ میچوں کے سفر میں مجموعی طور پر 686 ٹیسٹ کرکٹر اور 80 کپتان ہوئے ہیں۔ جیمس للی وہائٹ انگلینڈ کی ٹیم کے پہلے کپتان تھے اور موجودہ کپتان جوروٹ 80 ویں کپتان ہیں۔
جیت سے زیادہ ہار
انگلینڈ نے آسٹریلیا کے خلاف346ٹیسٹ میچ کھیلے ہیں، جن میں سے انگلینڈ نے 108 ٹیسٹ جیتے ہیں جبکہ 144 میچوں میں اسے ہارملی ہے۔ویسٹ انڈیز کے خلاف 154 ٹیسٹ میچوں میں اسے 48 میچوں میں جیت ملی ہے اور 55 میچوں میں انگلینڈکو ہار کاسامنا کرنا پڑا ہے جبکہ51 ٹیسٹ ڈرا رہے۔ ہندوستان کے خلاف انگلینڈ کو 43 میچوں میں جیت ملی، 25 میچوں میں ہار ہوئی جبکہ 49 ٹیسٹ ڈرا رہے۔ پاکستان کے خلاف انگلینڈ نے 83 ٹیسٹ کھیلے۔ ان میں سے 25 میچوں میں انگلینڈ نے فتح حاصل کی ، 21 میچوں میں اسے ہار کا سامنا کرنا پڑا جبکہ 37 ٹیسٹ ڈرا رہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *