اے ایم یو کے شعبۂ نفسیات میں ’اسلامی نفسیات اور کاؤنسلنگ ‘ کے موضوع پر دو ہفتہ کے اورئنٹیشن پروگرام کا آغاز

AMU-PVC-Prof-M-H-Beg
علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کے شعبۂ نفسیات کی جانب سے ’اسلامی نفسیات اور کاؤنسلنگ‘ کے موضوع پر دو ہفتہ تک جاری رہنے والے اورئنٹیشن پروگرام کا آغاز ہوا ، جس کا مقصداسلامی افکار و نظریات کی روشنی میں افراد کی کاؤنسلنگ کے طور طریقوں سے واقف کرانا ہے۔ پروگرام کی افتتاحی تقریب سے بطور مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے اے ایم یو کے پرو وائس چانسلر پروفیسر ایم ایچ بیگ نے کہاکہ مغربی علم نفسیات میں بہت سی مفیدباتیں ہیں ، مگر روحانیت کے پہلو سے بہت کچھ کئے جانے کی ضرورت ہے۔
انھوں نے کہاکہ کسی بھی علم کے شعبہ میں تحقیق و جستجو کے لئے سخت محنت اور ڈسپلن کی ضرورت ہوتی ہے ۔ انھوں نے اعتماد ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ اس پروگرام کے شرکاء نفسیات کا اسلامی فریم ورک ڈیزائن کریں گے اور یہ بتائیں گے کہ کس طرح اس سے پوری دنیا کو فائدہ ہوسکتا ہے۔ اس موقع پر پروفیسر ایم ایچ بیگ نے اورئنٹیشن پروگرام کے کتابچہ کا بھی اجراء کیا ، جسے مشترکہ طور سے ڈاکٹر فوزیہ نظام اور ڈاکٹر زہرا خاتون نے مرتب کیا ہے۔
فیکلٹی آف سوشل سائنسز کے ڈین اور پروگرام کے کوآرڈنیٹر پروفیسر اکبر حسین نے خودآگہی، اسلامی نقطۂ نظر سے نفسیاتی طریقۂ علاج اور سماجی و مذہبی دھارا میں فرد کے دوبارہ انضمام کی اہمیت پر روشنی ڈالی۔ انھوں نے کہاکہ نفسیات کے نظریات اور عملی اقدامات سے حاصل ہونے والے علم کو اسلامی قانونی روایت کے اصولوں ، ان کے اعلیٰ مقاصد اور اخلاقی قدروں سے ہم آہنگ کئے جانے کی ضرورت ہے۔ نفس، روح، قلب، عقل، تفکیر، سلوک اور تصرف کے تصورات پر گفتگو کرتے ہوئے پروفیسر حسین نے کہا کہ انسانی برتاؤ کو اسلامی نقطۂ نظر سے سمجھنے اور اپنے خالق کے ساتھ رشتہ کو ذہن میں رکھ کر کاؤنسلنگ کئے جانے کی ضرورت ہے۔
ویمنس کالج کی پرنسپل پروفیسر نعیمہ گلریز نے بطور مہمان اعزازی خطاب کرتے ہوئے کہاکہ صدمہ اور تکلیف میں مبتلا افراد کے لئے مذہبی کتابوں کا مطالعہ باعث سکون ہوتا ہے۔ انھوں نے کہاکہ ہمیں علم کو حاصل کرنا چاہئے اور تلاش و جستجو اور تحقیق سے کبھی پیچھے نہیں ہٹنا چاہئے اور اسی کے ساتھ سچے طریقہ پر چلتے ہوئے سچائی کی تلاش بھی کرنی چاہئے۔ شعبۂ نفسیات کی سربراہ پروفیسر رومانہ این صدیقی نے شکریہ ادا کیا۔ افتتاحی تقریب میں پروفیسر حافظ ایم الیاس خاں سمیت دیگر سینئر اساتذہ موجود تھے۔ ڈاکٹر فوزیہ الصبا شیخ نے نظامت کے فرائض انجام دئے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *