ہجومی تشدد پروزیرداخلہ کا بیان کسی بھی طرح تسلی بخش نہیں:ششی تھرور

shashi-tharoor
لوک سبھا میں آج کانگریس کے سینئرلیڈر ششی تھرور نے تروونت پورم میں اپنے دفتر پرہوئے حملے کا معاملہ اٹھایا۔انہوں نے اپنی جان کوخطرہ کادعویٰ کرتے ہوئے الزام لگایاکہ ملک میں عد م تحفظ بڑھ رہا ہے۔ وقفہ صفرمیں اس معاملے کواٹھاتے ہوئے ششی تھرور نے وزیراعظم نریندرمودی سے ایسے واقعات پرچپی توڑنے کی مانگ کی۔انہو ں نے الزام لگایاکہ ایسے حملے ملک بڑھ رہے ہیں۔کل ہی سوامی اگنی ویش پرحملہ کیاگیا اورایسابرسراقتدارپارٹیوں کے اشارے پرہورہاہے۔
کانگریس لیڈرششی تھرورنے کہاکہ ماب لنچنگ پر لوک سبھا میں مرکزی وزیرداخلہ کا بیان کسی بھی طرح سے تسلی بخش نہیں ہے۔ اسلئے ہم نے ایوان سے واک آؤٹ کیا۔انہو ں نے کہاکہ یہ کوئی پنگ-پانگ کاکوئی کھیل نہیں جومرکزی حکومت اپنی ذمہ داریاں ایک دوسرے پرپھینکتی رہے۔
دراصل،ماب لنچنگ پرمرکزی وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ نے آج لوک سبھا میں کہاکہ مرکزی حکومت کی جانب سے بھی ہجومی تشددکوروکنے کوشش جارہی ہے لیکن تشددروکنا ریاست کی ذمہ داری ہے۔مرکزی حکومت نے ریاستی حکومتیں کوہدایت دی ہے۔فیک نیوز پر بھی روک کی کوشش کی جارہی ہے۔ماب لنچنگ پر وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ کے بیان کے خلاف کانگریس کے ارکان پارلیمنٹ نے پہلے ہنگامہ کیا اورپھرلوک سبھاسے واک آؤٹ کیا۔

 

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *