کنگ خان کا سفر:سیریل’فوجی ‘ سے فلم ’زیرو‘تک

SRK
بالی ووڈ میں’ دلوالے دلہنیا لے جائیں گے ‘، ’دل تو پاگل ہے‘، ’کچھ کچھ ہوتا ہے ‘، ’محبتیں ‘اور’کبھی خوشی کبھی غم‘ جیسی کامیاب سپرہٹ فلموں سے ایک رومانٹک اداکار کے طور پر شنا خت بنانے والے سپر اسٹار ادا کار شاہ رخ خان نے سال گذشتہ انڈسٹری میں کامیابی کے 25سال مکمل کئے تھے۔ امسال2018میں 26برس کے موقع پر ان کی بیگم گوری خان نے ٹویٹرپرایک ویڈیوشیئرکیاہے ،جس میں شاہ رخ خان کے اب تک فلمی سفر کا ذکر ہے۔ویڈیومیں شاہ رخ کے ٹی وی سیریل فوجی سے لیکرآنے والی فلم ’زیرو‘تک پورے سفرکا ذکر کیا گیا ہے۔ شاہ رخ کی بیگم گوری خان نے ٹویٹراکاؤنٹ پر6منٹ 28سیکنڈ کا ویڈیوشیئرکیا ہے جس میں خود کنگ خان اپنے فلمی سفرکاذ کرکررہے ہیں۔ شاہ رخ بتارہے ہیں کہ کیسے ٹیلی ویزن سیریل ’فوجی‘ سے شروعات کرکے آج وہ ’زیرو‘تک پہنچے ہیں۔
گوری خان کی اس ٹویٹ کوشیئرکرتے ہوئے شاہ رخ نے لکھاکہ’یہ سفر آپ لوگوں کے بغیر ادھوراہے۔ یہاں آپ سب کو بتارہا ہوں کہ کس نے کامیاب بنایااور آپ لوگوں نے مجھے کتنی خوشی دی۔‘اس سے پہلے انڈسٹری میں 26سال ہونے پر شاہ رخ نے اپنے ٹویٹرا کا ؤنٹ پرایک جذباتی پوسٹ بھی لکھا تھا۔شاہ رخ نے لکھاتھاکہ ’’کل دوسروں کاکرداراداکرتے ہوئے زندگی کا آدھاوقت ختم ہوجائے گا۔ پیار ، خوشی ، دکھ ، ڈانس، گرنا اوراڑنا دکھا تے ہوئے۔ امیدکرتاہوں کہ میں نے آپ کے دل کے چھوٹے سے کونے کوچھواہوگا اورامید کرتاہوں کہ پوری زندگی ایساکرتا رہوں۔ روشنی میری بہت دورتک جائے گی، لیکن شرط یہ ہے کہ سلیقے سے جلاؤ مجھ کو‘‘۔
ابتدائی زندگی
شاہ رخ خان کی پیدائش 2 نومبر، 1965 میں ہوئی ہے۔ جنہیں اکثر شاہ رخ خان کے طور پر اور غیر رسمی طور پر ایس آرکے نام سے پکاراجاتا ہے ۔ اکثر میڈیا میں انہیں ’بالی ووڈ کا بادشاہ‘، ’کنگ خان‘، ’رومانس کنگ ‘اور’کنگ آف بالی ووڈ‘ ناموں سے بھی پکارا جاتا ہے۔ بتایاجاتاہے کہ شاہ رخ کا نام پہلے عبد الرحمٰن رکھا گیا تھا پھر ان کے والد نے اسے بدل کر شاہ رخ خان رکھ دیا۔شاہ رخ آج بالی ووڈ کے سب سے مہنگے اداکاروں میں شامل ہیں لیکن انھیں اپنی فلم ’کبھی ہاں کبھی نہ‘ کے لیے صرف 25 ہزار روپے ہی ملے تھے۔ اتنا ہی نہیں اس فلم کے لیے شاہ رخ نے ممبئی کے سنیما ہال کے باہر فلم کے ٹکٹ بھی فروخت کیے تھے۔ شاہ رخ خان کی پہلی کمائی صرف 50 روپے تھی جو انھیں گلوکار پنکج ادھاس کے ایک کنسرٹ میں کام کرنے کے دوران ملی تھی۔شاہ رخ کو کھیل کود سے بھی بہت دلچسپی رہی ہے اور اپنے کالج کے زمانے میں وہ کئی بار فٹبال اور ہاکی کے مقابلوں میں حصہ لے چکے ہیں۔
ویسے شاہ رخ خان نے اپنا کیریئر 1988میں دوردرشن کے سیریل ’فوجی‘سے شروع کیا جس نے کمانڈو ابھیمنیو رائے کا کردار ادا کیا۔ اس کے بعد انہوں نے اور بہت سیریلز میں اداکاری کی جن میں اہم تھا 1989کا ’سرکس‘، جس سرکس میں کام کرنے والے افراد کی زندگی کو بیان کیا گیا تھا اور جس کی ہدایت عزیز مرزا نے کی تھی۔ اسی سال انہوں نے ارون دھتی رائے کی طرف سے لکھی انگریزی فلم ’ان وچ اینی گیوز اٹ دوز ون ‘میں ایک چھوٹا سا کردار ادا کیا۔ یہ فلم دہلی یونیورسٹی میں طالب علم کی زندگی پر مبنی تھی۔
اپنے والدین کی وفات کے بعد 1991ء میں خان نئی دہلی سے ممبئی آ گئے۔تاہم انہیں بالی ووڈ میں پہلا موقع 1990کی دہائی میں فلم ’دیوانہ‘ سے اپنے کرےئرکاآغاز کیا۔فلم باکس آفس پر کامیاب رہی۔ اس فلم کے لیے انہیں فلم فیئر کی طرف سے بہترین نوآموز اداکار کا ایوارڈ ملا۔ ان کی اگلی فلم تھی ’مایا میم صاحب‘جو کامیاب نہیں ہوئی۔خاص بات یہ ہے کہ کنگ خان نے آدتیہ چوپڑا کی پہلی فلم ’دل والے دلہنیا لے جائیں گے‘میں اہم کردار ادا کیا۔ یہ فلم بالی وڈ کی تاریخ کی سب سے زیادہ کامیاب اور بڑی فلموں میں سے ایک مانی جاتی ہے۔ اس فلم کے لیے انہیں ایک بار پھر فلم فیئرکا بہترین اداکار ایوارڈ حاصل ہوا۔ اس فلم نے شاہ رخ خان کو بالی وڈ کا سپر سٹار بنا دیا۔
خان کیلئے کچھ فلمیں مایوس کن رہیں،جن میں زمانہ دیوانہ، گڈو، او ڈارلنگ یہ ہے انڈیا، تری مورتی، انگلش بابو دیسی میم، چاہت اور کوئلہ شامل ہیں، ان کی بعض فلمیں مثلاً آرمی اور رام جانے اوسط درجے کی رہیں۔
شاہ رخ خان نے اپنے 26 سالہ کیرئیرمیں متعدد کردار نبھائے ہیں۔ جن میں پاگل اورجنونی عاشق، محبت کرنے والا باپ، رومانٹک ہیرو اور خطرناک ولن کے کردار شامل ہیں۔تاہم انہوں نے چند کردارادا نہیں کئے ہیں۔جیسے پولیس کا کردار، وکیل ،ڈاکٹر ،مصور اورفیشن ڈیزائنر کا کردارقابل ذکرہیں۔ یاد رہے کہ 2001 میں کنگ خان فلم ’ون ٹو کا فور‘میں اسپیشل ٹاسک فورس آفیسرکے کردارمیں نظرتوآئے تھے مگروہ فلم میں پولیس یونیفارم میں نظرنہیں آئے ۔ آنے والی فلم ’زیرو‘میں شاہ رخ بونے کاکرداراداکرتے نظرآئیں گے۔
اہم فلمیں
دیوانہ،چمتکار،دل آشنا ہے،راجو بن گیا جینٹل مین،کنگ انکل،کبھی ہاں کبھی نا، انجام، زمانہ دیوانہ،او ڈارلنگ یہ ہے انڈیا، گڈو، تر مورتی،بازی گر،ڈر،کرن ارجن،دل والے دلہنیا لے جائیں گے،رام جانے، چاہت، انگلش بابو دیسی میم، کوئلہ،پردیس، یس باس، ڈو پلیکیٹ، جوش،ون ٹو کا فور،دل تو پاگل ہے،دل سے،کچھ کچھ ہوتا ہے، بادشاہ،پھر بھی دل ہے ہندستانی، محبتیں، اشوکا، ہم تمہارے ہیں صنم، چلتے چلتے،دیوداس،کل ہو نہ ہو،ویر زارا، اوم شانتی اوم،چک دے انڈیا، کبھی الوداع نہ کہنا،میں ہوں نا،رب نے بنادی جوڑی، بلو، ڈان، مائی نیم اِز خان،را ۔ ون، ڈان 2،جب تک ہے جان،چنئی ایکسپرس،ہیپی نیو ائیر، ،جب تک ہے جاں،رئیس ،ڈیئر زندگی ، فین اورجب ہیری میٹ سیجل وغیرہ قابل ذکرہیں۔
اعزازات
شاہ رخ خان کو فلم انڈسٹری میں نمایاں خدمات سر انجام دینے پر اور فلم انڈسٹری میں ان کی شراکت کے لیے کئی اعزازات مل چکے ہیں۔ انہوں نے تیس نامزدگیوں میں سے چودہ فلم فیئر ایوارڈ جیتے ہیں۔ وہ اور دلیپ کمار ہی ایسے دو اداکار ہیں جنہوں نے فلم فیئر بہترین اداکار کا ایوارڈ آٹھ بار جیت لیا ہے۔ 2013 میں جنوبی ہند کے تقریبِ ایوارڈ’’سالانہ وجے ایوارڈز‘‘میں شاہ رخ خان کو شیوالیر سیواجی گنیشن ایوارڈ دیا گیا تھا۔ 2014ء میں شاہ رخ خان کو سالانہ وجے ایوارڈز میں انٹرٹینر آف انڈین سینما ایوارڈ سے نوازا گیا۔اسی سال بھارتی سینما کی ترقی کے لیے ان کی شاندار خدمات پر ایشین ایوارڈ سے بھی نوازا گیا۔ اس کے علاوہ وہ اپسرا فلم ایوارڈز، ایشین فلم ایوارڈز، سی این این آئی بی این انڈین آف دا ائیر ایوارڈز، گلوبل انڈین فلم ایوارڈ،آئیفا ایوارڈ، سینسئی ویور چوائس ایوارڈ، اسکرین ایوارڈز، اسٹار ڈسٹ ایوار ڈز، اسٹار سب سے فیوریٹ کون ایوارڈ ، زی سنے ایوارڈ سمیت انڈیا کے تقریباً ہر فلمی آرگنائزیشن کا ایوارڈ حاصل کر چکے ہیں، البتہ انہوں نے ابھی تک نیشنل فلم ایوارڈ حاصل نہیں کیا ہے۔
شاہ خان کوسماجی خدمات کے اعتراف میں متعدداداروں نے ایوا رڈز سے نوازاہے۔ 2005ء میں ہندوستان کی حکومت نے انہیں پدم شری سے نوازا۔2015ء میں شاہ رخ خان کو حکومت فرانس کی جانب سے آرڈر ڈیس آرٹس اور ڈیس لیٹرز (نائٹ آف آرٹس اور لیٹرز) اور نائٹ آف لیجن آف آنر اعزاز عطا کیا گیا۔ اتناہی نہیں، متعدد بین الاقوامی یونیورسٹیز نے انہیں اعزازی ڈاکٹر یٹ کی ڈگریوں سے بھی نوازا ہے۔ قابل ذکریہ بھی ہے کہ شاہ رخ کو 2008 میں امریکی جریدے ’نیوز ویک ‘نے دنیا کے 50 بااثرترین شخصیات میں شامل کیا تھا۔
بتادیں کہ شاہ رخ خان اس وقت اپنی آنے والی فلم ’زیرو‘ کی شوٹنگ میں مصروف ہیں۔ آنے والی فلم ’زیرو‘میں شاہ رخ بونے کاکرداراداکرتے نظرآئیں گے۔یہ فلم کرسمس کے موقع پراسی سال دسمبرمیں ریلیزہوگی۔اس فلم میں شاہ رخ خان کے ساتھ انوشکاشرما، آر مادھون اورکٹرینہ کیف بھی اہم کردارمیں ہیں۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *