سپریم کورٹ کے فیصلے پرسی ایم کجریوال نے کہا-یہ دہلی کے لوگوں کی بڑی جیت

arvind-kejriwal
چیف جسٹس آف انڈیادیپک مشرا کی صدارت میں سپریم کورٹ کی پانچ رکنی آئینی بنچ نے آج دہلی سرکاراورلیفٹیننٹ گورنرکے اختیارات کولیکرجاری جنگ کے بیچ اپنا اہم فیصلہ سنایاہے۔ہائی کورٹ کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل کرنے کے بعد آج بدھ کوآئے عدالت عظمیٰ کے فیصلے پردہلی کے وزیراعلیٰ اروندکیجریوال نے ٹویٹ کرکے کہاہے کہ یہ دہلی کے لوگوں کیلئے بڑی جیت ہے، جمہوریت کیلئے بڑی جیت ہے۔وہیں، نائب وزیراعلیٰ منیش سسودیانے سپریم کورٹ کے فیصلے کوتاریخی فیصلہ بتایاہے۔انہوں نے کہاکہ اب دہلی سرکارکوایل جی کی منظوری کیلئے فائل نہیں بھیجنی ہوگی اورکام میں رکاوٹ پیدانہیں ہوگی۔انہو ں نے کہاکہ میں سپریم کورٹ کاشکریہ اداکرناچاہتاہوں، یہ جمہوریت کی جیت ہے۔
سپریم کورٹ نے دہلی سرکاربنام ایل جی کی جنگ پرسنوائی کرتے ہوئے کہاکہ گورنرکوہرمسئلے کوصدرکے پاس نہیں بھیجناچاہئے۔ایساکرنے سے پہلے انہیں اپنے دماغ کا استعمال کرناچاہئے۔عوام کے ذریعہ منتخب کردہ سرکارکوعزت دینی لازمی ہے۔ایل جی صرف کچھ اہم معاملے صدرکے پاس بھیج سکتے ہیں۔لیکن ہرمعاملے میں ایسانہیں کرناچاہئے۔
وزیر اعلی اور ایل جی کے درمیان اختیارات کی لڑائی سے وابستہ عرضی پر سپریم کورٹ نے صاف کردیا ہے کہ ایل جی تنہا فیصلہ نہیں لے سکتے ہیں ، وہ وزیر اعلی سے مل کر بات کریں۔ چیف جسٹس نے مزید کہا کہ دہلی کو مکمل ریاست کا درجہ نہیں دیا جاسکتا ہے۔ زمین ، پولیس اور لا اینڈر آرڈر کے معاملات مرکز کے ہی پاس رہیں گے۔ ساتھ ہی ساتھ انہوں نے یہ بھی کہا کہ دہلی حکومت کو ہر معاملہ میں ایل جی کی اجازت لینے کی ضرورت نہیں ہے۔ ایل جی دہلی حکومت کیساتھ مل کر کام کریں اور ان کے فیصلوں کا احترام کریں۔
یادرہے کہ گذشتہ سال 6دسمبرکوسپریم کورٹ نے دہلی سرکارکے فیصلے کے خلاف دائراپیل پراپنافیصلہ محفوظ رکھ لیاتھا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *